اسرائیل کی وحشیانہ بمباری، غزہ کی الرمال کالونی راتوں رات ملبے کے ڈھیر میں تبدیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی سے فلسطینی مزاحمت کاروں کے اسرائیل پر حملے کے بعد اسرائیلی فوج نے غزہ میں وسیع پیمانے پر تباہی شروع کی ہے۔ گذشتہ شب اسرائیلی فوج نے الرمال کالونی پر رات بھر بمباری جاری رکھی جس کے نتیجے میں پوری کالونی ملبےکے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی ہے۔ دوسری طرف سوشل میڈیا پر الرمال کالونی میں ہونے والی تباہی کے مناظر کو بڑے پیمانے پر دیکھا جا رہا ہے۔

ان مناظرمیں دیکھا جا سکتا ہے کہ بمباری کے کئی گھنٹے بعد بھی عمارتوں میں آگ لگی ہوئی ہے اور آگ میں لپٹے گھروں سے دھوئیں کے بادل اٹھ رہے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے گذشتہ رات کو غزہ کی پٹی میں 200 سے زاید اہداف کو نشانہ بنا کر انہیں تباہ کیا ہے۔ ان میں خانو یونس میں موجود اہداف شامل ہیں۔

فوج نے ایک بیان میں کہا کہ اس نے اسلامی جہاد تحریک کے بنیادی ڈھانچے پر حملہ کیا۔ اس کے علاوہ حماس سے تعلق رکھنے والے ہتھیاروں کے ڈپو کو تباہ کیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسلحے کے متعدد گودام مساجد کے تہ خانوں میں بنائے گئے تھے۔ اس کے علاوہ جن اہداف پر حملہ کیا گیا ان میں ایک رہائشی اپارٹمنٹ اور ایک رہائشی ٹاور شامل تھا۔

اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں غزہ کی پٹی میں تقریباً 687 فلسطینیوں سمیت 700 سے زائد فلسطینی مارے گئے، جب کہ اسرائیلی فوج نے اعلان کیا کہ حماس کے بستیوں پر حملے کے آغاز سے اب تک تقریباً 1000 اسرائیلی ہلاک اور 2616 زخمی ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں