جنوبی لبنان سے اسرائیل پر راکٹ حملے کیے: حماس کا دعویٰ

ایک ٹینک کو نشانہ بنانے کے جواب میں اسرائیل نے حزب اللہ کی جاسوسی کے مقامات پر بمباری کی

حقائق تصدیق ٹرینڈنگ
پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسلامی تحریک مزاحمت ۔ حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈ نے اعلان کیا ہے کہ اس نے منگل کے روز جنوبی لبنان سے اسرائیل کے علاقے مغربی الجلیل پر راکٹ حملہ کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ ہم نے آزادی کے راستے پر ایک قدم اٹھایا اور جنوبی لبنان کے علاقے مغربی الجلیل پر راکٹوں کی بمباری کے ساتھ واپسی کی ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ ہمارا مزاحمتی کام اس وقت تک جاری رہے گا جب تک کہ ہم اپنے لوگوں کی آزادی، مسجد اقصیٰ کا حصول، القدس اور دیگر مقدس مقامات کی بحالی اور فلسطینیوں کا ’’حق واپسی‘‘ حاصل نہ کرلیں۔ اسی طرح غزہ کا محاصرہ بھی ختم نہ کرا لیا جائے۔

سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ حزب اللہ نے منگل کو ایک اسرائیلی ٹینک کو نشانہ بنایا۔ حزب اللہ نے اعتراف کیا کہ اس نے شمالی اسرائیل میں ایک فوجی گاڑی کو دو گائیڈڈ میزائلوں سے نشانہ بنایا۔ دوسری طرف اسرائیلی فوج کے ترجمان ادرائی نے کہا ہے کہ فوج نے لبنان میں حزب اللہ کے 3 جاسوسی مقامات پر بمباری کی ہے ۔

اس سے قبل لبنانی میڈیا نے کہا تھا کہ لبنانی سرزمین سے اسرائیل میں بالائی الجلیل کے علاقے کی طرف کئی راکٹ داغے گئے۔ اسرائیلی فوج نے کہا کہ اس نے لبنانی سرزمین سے راکٹ داغنے کا جواب توپ خانے سے دیا۔ لبنان سے تقریباً 15 راکٹ داغے گئے جن میں سے چار کو روک دیا گیا اور 10 کھلے مقامات پر گرے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں