غزہ: اسرائیلی حملے میں القسام کمانڈرالضیف کے بھائی سمیت خاندان کے متعدد افراد شہید

شہید ہونے والوں میں القسام کمانڈر محمد الضیف کے بھائی 60 سالہ عبدالفتاح الضیف، ایک خاتون اور ایک اڑھائی سالہ بچہ شامل ہیں۔ متعدد افراد مکانوں کے ملبے تلے دبے ہوئے ہیں جنہیں نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر گذشتہ شب اسرائیلی فوج کے تباہ کن حملوں میں حماس کے دو سیاسی رہ نماؤں اور عسکری ونگ القسام بریگیڈ کے کمانڈرمحمد الضیف کے بھائی سمیت خاندان کے تین افراد شہید ہوگئے۔

حماس کے عسکری ونگ عزالدین القسام بریگیڈز کے کمانڈر انچیف محمد الضیف کے خاندان کے ایک نجی ذریعے نے آج بدھ کو انکشاف کیا کہ الضیف کے بھائی اور ان کے خاندان کے تین افراد خان یونس شہر میں خاندان کے گھر پر اسرائیلی بمباری میں مارے گئے۔

ذرائع نے بتایا کہ 60 سالہ عبدالفتاح الضیف ، 40 سالہ مدحت عبدالفتاح الضیف ان کا ایک پوتا اڑھائی سالہ براء مدحت شہید ہوگیا۔ بمباری میں متعدد دیگر افراد زخمی ہوئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ جاں بحق ہونے والی خاتون کی ایک بیٹی اس وقت خان یونس کے ناصر میڈیکل کمپلیکس میں انتہائی نگہداشت میں زیر علاج ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خاندان کے باقی افراد کی تلاش کے لیے کارروائیاں جاری ہیں۔

اسرائیلی اخبار یروشلم پوسٹ نے تصدیق کی ہے کہ اسرائیلی فوج نے القسام بریگیڈز کے کمانڈر کے والد کے گھر پر بمباری کی۔

دریں اثناء فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ قیزان النجار میں الضیف خاندان کے گھر کو نشانہ بنایا گیا۔ اسرائیلی حملے کے نتیجے میں خاندان کے کم سےکم 4 افراد شہید ہو گئے۔

فلسطینی میڈیا کے مطابق متعدد افراد اب بھی ملبے تلے دبے ہوئے ہیں اور انہیں نکالنے کی کوشش جاری ہے۔

غزہ میں وزارت داخلہ نے کہا تھا کہ قیزان النجار کے علاقے پر شدید اسرائیلی بمباری میں ہلاکتیں اور زخمی ہوئے ہیں۔جس میں گھروں کو نشانہ بنایا گیا اور سڑکیں بھی تباہ ہوئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں