اسرائیل میں امریکیوں کی ہلاکتیں بڑھ کر 25 ہو گئیں

اسرائیلی مغویان کو بحفاظت چھڑانے کے لئے مل کر کام کر رہے ہیں۔ وزیر خارجہ امریکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکہ کے وزیر خارجہ آنتونی بلنکن نے اسرائیل میں حماس کے حملوں میں امریکیوں کی ہلاکتوں کے بارے میں ' اپ ڈیٹ ' کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب تک کم
از کم 25 امریکی ہلاک ہو چکے ہیں۔ خیال رہے اس سے پہلے یہ تعداد امریکہ کی جانب سے 14 بتائی گئی تھی ۔

امریکی وزیر خارجہ اسرائیل پر حماس کے بڑے اور تباہ کن حملے کے بعد اسرائیل کے دورے پر جمعرات کے روز تل ابیب پہنچے ہیں۔ جہاں انہوں نے نتن یاہو اور اسرائیل کے دیگر اعلی عہدے داروں کےساتھ ملاقاتیں کی ہیں ۔

بلنکن نے ان ملاقاتوں میں خطے کی صورت حال کا جائزہ لیا اور اسرائیل کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔ اس سلسلے میں امریکی وزیر خارجہ اور وزیر اعظم نیتن یاہو کا ایک مشترکہ بیان بھی پریس کو جاری کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ نے کہا ہے واشنگٹن اسرائیل کے ساتھ گہرے قریبی رابطے میں ہے اور اسرائیل کے ساتھ متعلقہ امور پر مل کر کام کر رہا ہے۔ تاکہ حماس کے ہاتھوں گرفتار کئے گئے اسرائیلیوں کو محفوظ چھڑایا جا سکے۔

واضح رہے فلسطینی مزاحمتی گروپ حماس نے اسرائیلی فوجیوں کے علاوہ بھی کئی اسرائیلیوں کو غزہ میں بطور مغوی رکھا ہوا ہے۔ اسرائیلی مغوی فوجیوں کی تعداد کافی زیادہ بتائی جاتی ہے۔ اس بارے میں امریکی وزیر خارجہ کے ساتھ اسرائیلی حکام نے تفصیل سے بات کی یے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں