مشرق وسطیٰ

اقوام متحدہ اپنی سیاسی قوت سے اسرائیل کے نئے جنگی جرائم روکے: عرب لیگ

بمباری قبول نہیں، اہل غزہ کو جنوب کی طرف نہ دھکیلا جائے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عرب لیگ نے اسرائیل کو غزہ کے عام شہریوں پر وحشیانہ جنگی کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا ہے یہ ناقابل قبول ہے۔ اقوام متحدہ اس نئے اسرائیلی جنگی جرم کو روکنے لئے اپنی سیاسی اور اخلاقی حیثیت کو استعمال میں لائے۔

عرب لیگ کی طرف سے اس امر کا اظہار جمعہ کے روز اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیریس کے نام لکھے گئے ایک خط میں کیا ہے۔ یہ خط غزہ پر جاری اس کی بمباری اور غزہ کے مسلسل محاصرے کے سلسے میں اپنے غم س غصے کا اظہار کرنے لئے لکھا ہے۔

خط میں دوٹوک کہا گہا ہے کہ اقوام متحدہ اسرائیل کی طرف سے غزہ کے شہریوں کے خلاف نئے جنگی جرائم کو روکنے کا اقدام کرے اس سلسلے میں اپنی سیاسی قوت کا بھی استعمال کرے اور اخلاقی حیثیت کا بھی۔ تاکہ غزہ کے بسنے والوں کے خلاف اسرائیل کی شرمناک بمباری مہم رک سکے۔

عرب لیگ نے اسرائیل کی جانب سے اہل غزہ کو جنوب کی طرف نکل جانے کی وارننگ کو فلسطنی عرب بھائیوں کو نئے مصائب و مشکلات میں ڈال دینے کے مترادف کہا۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے نام خط میں عرب لیگ اسرائیل اقدامات اور کارروائیوں کو جنیوا کنونشن کے آرٹیکل 49 کی کھلی خلاف قرار دیا گیا ہے۔

عرب لیگ نے کہا ہے اگر فلسطینی عرب بھائیوں کو غزہ سے کہیں اور دھکیل دینے کی کوشش کی گئی تو یہ ان کی نہ ختم ہونے والی مشکلات کا ایک نیا سلسلہ شروع کرنا ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں