حزب اللہ نے اسرائیل کے خلاف جنگ نہ کرنے کی کوئی گارنٹی نہیں دی: وزیر اعظم لبنان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کے وزیر اعظم نے اس جانب اشارہ کیا ہے کہ حزب اللہ نے انہیں ایسی یقین دہانی نہیں کرائی ہے جس کا مطلب یہ ہو کہ حزب اللہ خود کو اسرائیل کے غزہ پر حملوں کے باوجود جنگ میں نہیں کودے گی۔

وزیر اعظم نجیب میقاتی کے مطابق یہ انحصار اسرائیل پر ہوگا کہ وہ حزب اللہ کو مشتعل کرنے والے اقدامات نہ کرے۔ نجیب میقاتی مقامی ٹی وی چینل کو انٹرویو دے رہے تھے۔

انہوں نے مزید کہا جب ان کی اس بارے میں حزب اللہ سے بات چیت ہوئی تو مجھے حزب اللہ کے رہنماوں کی بات چیت میں معقولیت اور استدلالی انداز محسوس ہوا۔

ایک سوال کے جواب میں لبنانی نگران وزیر اعظم نے کہا اہم بات لبنان کا استحکام ہے۔ لیکن مجھے اس بات میں کسی کی طرف سے بھی ایسی ضمانت نہیں دی گئی۔ اس لئے نہیں کہا جا سکتا کہ آنے والے دنوں میں کس طرح کی صورت حال جنم لے۔ کیونکہ ہر لمحہ ایک نیا واقعہ ہو رہی ہے اور تبدیلی دیکھنے کو مل رہی ہے۔

خیال رہے امریکہ نے حزب اللہ کو خبردار کیا ہے کہ وہ اسرائیل اور حماس کی جنگ سے دور رہے اور اس میں حصے دار نہ بنے۔ کیونکہ خدشہ ہے کہ اس طرح لبنان میں بھی سویلین آبادی کی زیادہ ہلاکتیں ہو جائیں گی۔

سرکاری حکام اور ذرائع کا کہنا ہے کہ فرانس نے بھی لبنان میں مختلف فریقوں کو پیغام بھییجا ہے کہ لبنان کو عدم استحکام میں لے جانے والے اقدامات نہ کئے جائیں ذرائع کا کہنا فرانس نے حزب اللہ کو بھی یہ پیغام بھجوا دیا ہے۔

لبنان کی ایرانی حمایت یافتہ تنظیم حزب اللہ اور ذسرائیل کے درمیان حالیہ دنوں میں سرحدی جھڑپیں تو ہوئی ہیں مگر اس سے زیادہ بات نہیں بڑھی ہے۔ تاہم اس بات کو نظر انداڈ نہیں کیا جارہا کہ حزب اللہ اسرائیل کی غزہ پر مسلسل بمباری اور غزہ کی ناکہ بندی کے سبب اسرائیل کو ایک اور محاذ کی طرف کھینچ لانے کی کوشش کرے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں