اگر سرحد پار حملے جاری رکھے تو"مہلک" جواب دیں گے: اسرائیلی فوج کا حزب اللہ کو انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی دفاعی افواج (آئی ڈی ایف) نے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو خبردار کیا ہے کہ اگر اس نے اسرائیل کے خلاف حملے جاری رکھے تو "مہلک" جواب ملے گا۔

جیسا کہ ٹائمز آف اسرائیل نے حوالہ دیا ہے، آئی ڈی ایف کے ترجمان ریئر ایڈمرل ڈینیئل ہگاری نے کہا، "حزب اللہ نے کل ایران کی ہدایت اور حمایت میں کئی حملے کیے تاکہ ہماری آپریشنل کوششوں کو [غزہ کی پٹی سے دور] ہٹایا جا سکے۔ اس طرح سے انہوں نے لبنان کی ریاست اور اس کے شہریوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔"

ہگاری نے مزید کہا: "ہم نے شمالی سرحد پر اپنی افواج میں اضافہ کیا ہے اور ہمارے خلاف ہونے والی کسی بھی سرگرمی کا جارحانہ جواب دیا جائے گا۔"

انہوں نے زور دے کر کہا: "اگر حزب اللہ نے ہمارا امتحان لینے کی ہمت کی تو ردِعمل مہلک ہو گا۔ امریکہ ہماری مکمل حمایت کر رہا ہے۔"

اتوار کے روز آئی ڈی ایف نے کہا کہ وہ لبنان کی سرحد سے چار کلومیٹر تک کے علاقے کو "الگ تھلگ" کر رہا ہے تو اس علاقے میں شہریوں کے داخلے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ یہ اسرائیلی افواج اور حزب اللہ کے درمیان فائرنگ کے تبادلے کے درمیان ہوا ہے۔ ایران کی حمایت یافتہ ملیشیا نے اسرائیل کے سرحدی علاقوں پر تین حملے کیے تھے جس کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک اور تین زخمی ہو گئے۔

حزب اللہ کے نائب سربراہ نعیم قاسم نے گذشتہ ہفتے کہا تھا کہ گروپ کے حماس-اسرائیل تنازع سے باہر رہنے کے لیے بین الاقوامی اور علاقائی مطالبات پر توجہ نہیں دی جائے گی۔

قاسم نے حزب اللہ ٹی وی المنار کے حوالے سے کہا، "عظیم طاقتوں، عرب ممالک، اقوامِ متحدہ کے سفراء کی طرف سے ہم سے پسِ پردہ مداخلت نہ کرنے کے بالواسطہ اور بلاواسطہ مطالبے کا کوئی اثر نہیں ہوگا۔ حزب اللہ اپنے فرائض کو بخوبی جانتی ہے۔ ہم تیار ہیں، پوری طرح تیار ہیں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں