سعودی فالکن کلب کو نیلامی میں 266,000 ڈالر کی بازیافت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی پریس ایجنسی نے اتوار کو رپورٹ کیا کہ سعودی فالکن کلب کی چوتھی نیلامی میں دو پرندے 146,000 ریال میں فروخت ہونے کے بعد فروخت کی رقم تقریباً 1 ملین سعودی ریال ($266,000) تک پہنچ گئی۔

یہ نیلامی یکم اکتوبر کو ریاض کے قریب کلب کے ملہم ہیڈ کوارٹر میں شروع ہوئی اور 15 نومبر تک جاری رہے گی۔

نیلامی کے مقامی پلیٹ فارم پر دو شاہین پیش کیے گئے تھے جنہوں نے مملکت اور اس سے باہر کے شائقین اور شاہین بازوں کی ایک بڑی تعداد کو اپنی طرف متوجہ کیا۔ دونوں 73,000 سعودی ریال میں فروخت ہوئے۔

قبل ازیں مملکت کے شمالی سرحدی خطے میں العویقیلہ سے ایک ہجرتی شاہین نے نیلامی کا شو اپنے نام کر لیا جو 250,000 سعودی ریال کی ریکارڈ قیمت میں فروخت ہوا۔ مکہ خطے کے شہر اللیث کا ایک اور شاہین 135,000 ریال میں فروخت ہوا۔

منتظمین نے کہا کہ اس تقریب کا مقصد مملکت کے شاہین بازی ورثے کو فروغ دینا اور متعلقہ ثقافتی اور اقتصادی سرگرمیوں کی حمایت کرنا جبکہ ایسے شعبے میں سرمایہ کاری کے مواقع پیش کرنا ہے جو قومی معیشت کی ترقی میں مدد فراہم کرتا ہے۔

نیلامی کے دوران کلب سعودی عرب میں شاہین بازی میں سرمایہ کاری اور اس شعبے کی ترقی کا خاکہ پیش کرتا ہے جس میں پرندوں کی خرید و فروخت سے متعلق ضوابط بھی شامل ہیں۔

دو پرندوں کے 146,000 سعودی ریال میں فروخت ہونے کے بعد سعودی فالکنز کلب کی چوتھی نیلامی میں فروخت کی رقم تقریباً 1 ملین سعودی ریال ($266,000) تک پہنچ گئی۔ (ایس پی اے)

سعودی فالکنز کلب شاہین مالکان کے لیے رہائش اور آمد و رفت کی پیشکش کرتا ہے جبکہ نیلامی ٹیلی ویژن چینلز اور کلب کے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر براہِ راست نشر کی جاتی ہے۔

2020 میں کلب کی اولین نیلامی کے دوران 20 دنوں میں 102 فالکن فروخت ہوئے تھے جن کی کل قیمتِ فروخت 10 ملین سعودی ریال سے زیادہ تھی۔ دوسری نیلامی میں 95 شاہین کل 8.3 ملین ریال میں اور تیسری نیلامی کے دوران 81 پرندے 7 ملین سعودی ریال سے زیادہ میں فروخت ہوئے۔

دریں اثنا ملہم میں پانچویں بین الاقوامی سعودی نمائش برائے شاہین و شکار ہفتے کے روز اختتام پذیر ہوئی جس میں متنوع پرکشش سلسلوں کے ساتھ ایک اہم تعداد میں لوگوں نے دیکھا۔ اس تقریب میں ورچوئل رئیلٹی شوٹنگ سمیلیشنز کے ساتھ ساتھ اصلی بندوق اور مشین گن شوٹنگ کے تجربات کے لیے ایک پویلین شامل تھا۔

پویلین میں 18 سال اور اس سے زیادہ عمر کے افراد کے لیے 1.5 میٹر کے فاصلے سے ہدف کی شوٹنگ میں مشغول ہونے کی سہولت تھی۔ تربیت یافتہ اساتذہ نے شرکاء کی رہنمائی کی اور انہیں آتشیں اسلحے سے نمٹنے اور ہدف بنانے کی تکنیک سکھائی۔

ورچوئل رئیلٹی شوٹنگ کے تجربے میں کم عمر افراد شوٹنگ کے منظرناموں اور گیمنگ ڈیوائسز پر مخصوص یا متعدد ورچوئل اہداف کو نشانہ بنا کر نقلی جنگی کارروائیوں میں شریک ہوئے۔

شاہین بازی اور شاعری کے علاوہ ایک روایتی بُنائی کا پویلین جس میں ثقافتی ورثے پر مبنی ٹیکسٹائل، لوازمات اور دستکاری بھی مقبول ثابت ہوئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں