رفح کراسنگ پر ایک نیا حملہ، اقوام متحدہ کے ایندھن کے 6 ٹرک غزہ میں داخل

توقع ہے اسرائیلی زمینی حملے سے پہلے کچھ لوگوں کو پٹی سے نکالنے کے لیے رفح کراسنگ کھول دی جائے گی: وائٹ ہاؤس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

غزہ کی پٹی اور مصر کے درمیان رفح بارڈر کراسنگ کے قریبی علاقے کو پیر کو اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کے دسویں دن ایک نئے حملے کا نشانہ بنایا گیا۔ 7 اکتوبر سے اس علاقے پر تین مرتبہ حملہ کیا گیا ہے۔ ایجنسی فرانس پریس کے مطابق رفح کراسنگ پر سینکڑوں فلسطینیوں کا ہجوم جمع ہے۔ یہ افراد رفح کراسنگ عبور کرنے کی اجازت کے منتظر ہیں۔

دریں اثنا سی این این کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے ایندھن کے 6 ٹرک رفح کراسنگ سے غزہ میں داخل ہوئے ہیں۔ اسرائیل کو رفح کراسنگ سے تمام امدادی ٹرکوں کے داخلے پر تحفظات ہیں اور اس نے ان کی تعداد میں کمی کی درخواست کی ہے۔

مختلف قومیتوں کے سینکڑوں غیر ملکی شہریوں کے ساتھ ساتھ دوہری شہریت والے فلسطینی بھی پیر کی صبح سے ہی رفح کراسنگ کے دروازے کے سامنے جمع تھے۔

وائٹ ہاؤس کے ترجمان جان کربی نے کہا ہے کہ وائٹ ہاؤس کے حکام کو امید ہے کہ غزہ کی پٹی اور مصر کے درمیان رفح کراسنگ کو پیر کو چند گھنٹوں کے بعد کھول دیا جائے گا تاکہ متوقع اسرائیلی زمینی حملے سے قبل کچھ لوگوں کو پٹی سے نکلنے کی اجازت دی جا سکے۔

غیر ملکیوں کو نکالنے اور امداد پہنچانے کے لیے جنوبی غزہ میں 5 گھنٹے کی جنگ بندی کے اعلان کے بعد رفح کراسنگ کو کھولنے کے بارے میں متضاد اطلاعات سامنے آئی ہیں۔ ’’العربیہ‘‘کے نامہ نگار نے بتایا تھا کہ 100 سے زیادہ ٹرک غزہ میں داخل ہونے کے منتظر ہیں۔ یہ ٹرک العریش سے رفح کراسنگ کے ذریعے غزہ کی پٹی میں داخل ہونے کا انتظار کر رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ جنگ بندی نہ ہونے کی وجہ سے غزہ کے لیے امدادی قافلہ العریش سے آگے نہیں بڑھا۔ انہوں نے جنوبی غزہ میں جنگ بندی کے منصوبے کو کامیاب بنانے کے لیے جاری سیاسی مشاورت کا بھی اشارہ دیا۔ دوسری طرف حماس کے ایک رہنما نے کراسنگ کھولنے کے لیے کسی بھی معاہدے کے وجود سے انکار کردیا۔

اس سے قبل دو مصری سیکورٹی ذرائع نے بتایا تھا کہ امریکہ، اسرائیل اور مصر کے درمیان جنوبی غزہ میں جنگ بندی کا معاہدہ طے پا گیا ہے۔ یہ معاہدہ رفح بارڈر کراسنگ کو دوبارہ کھولنے کے ساتھ ہی جی ایم ٹی وقت کے مطابق صبح چھ بجے شروع ہوگا۔ تاہم بعد میں اسرائیل اور حماس نے جنگ بندی کی تردید کردی۔

اسرائیل میں امریکی سفارت خانے نے پیر کو کہا کہ میڈیا رپورٹس سے پتہ چلتا ہے رفح کراسنگ مقامی وقت کے مطابق صبح نو بجے کھول دی جائے گی لیکن یہ واضح نہیں ہے کہ مسافروں کو اسے عبور کرنے کی اجازت ہوگی یا نہیں۔ اور یہ کراسنگ کتنے وقت کے لیے کھولی جائے گی۔

امریکی سفارت خانے نے غزہ میں اپنے شہریوں کو مشورہ دیا ہے کہ اگر وہ رفح کراسنگ کو محفوظ سمجھتے ہیں تو اس غزہ سے نکلنے کے لیے اس کی طرف جائیں۔

قبل ازیں ایک ذریعے نے امریکی اے بی سی نیٹ ورک کو بتایا تھا کہ رفح کراسنگ پیر کو چند گھنٹوں کے لیے کھلے گی پھر شام کو دوبارہ بند ہو جائے گی۔

رفح کراسنگ کے ایک سرکاری سیکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ رفح راہداری کو پیر کے روز دوبارہ کھولنے کی تیاری پر کام جاری ہے۔

امریکی وزیر خارجہ بلینکن نے اتوار کو تصدیق کی کہ انہیں یقین ہے کہ انسانی امداد مصر سے غزہ تک پہنچ جائے گی۔

بلینکن نے قاہرہ کے اپنے دورے کے دوران صحافیوں کو بتایا کہ رفح کراسنگ کھل جائے گی۔ امریکہ اقوام متحدہ، مصر اور اسرائیل کے ساتھ مل کر ایک طریقہ کار تیار کر رہا ہے تاکہ ان لوگوں تک امداد پہنچائی جا سکے جنہیں اس کی ضرورت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں