پوتین کا محمود عباس سے رابطہ، فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روسی صدر ولادیمیر پوتین نے فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس سے ٹیلی فون پر گفتگو کے دوران فلسطینیوں کی آزاد ریاست کے حق کی حمایت کا اظہار کیا ہے۔

فلسطینی خبر رساں ایجنسی 'وفا' نیوز کے مطابق پوتین نے جنگ بندی معاہدے اور غزہ میں امداد کے داخلے کی اجازت دینے پر زور دیا۔

فلسطینی رہنما محمود عباس نے کہا کہ غزہ کے شہریوں کو نشانہ بنانے والے حملوں کو فوری طور پر روکا جائے اور غزہ میں لوگوں کو ادویات، راشن اور پانی فراہم کیا جائے۔

محمود عباس نے فلسطینیوں کی غزہ سے بے دخلی کو 'نکبہ ثانی' قرار دیتے ہوئے اسے روکنے پر زور دیا۔ فلسطینی صدر نے دونوں جانب شہریوں کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مغوی عام شہریوں کو جلد از جلد رہا کیا جائے۔

غزہ کے حکام کے مطابق اسرائیلی حملوں میں کم از کم 2837 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں جن کا ایک چوتھائی فلسطینی بچے ہیں جبکہ 10 ہزار سے زائد زخمی ہیں۔ اس کے علاوہ ایک ہزار افراد لاپتہ ہیں جن کے بارے میں خدشہ ہے کہ وہ ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔

اسرائیل پر حماس کے حملے میں 1300 سے زائد اسرائیلی اور غیر ملکی شہری ہلاک ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں