سعودی عرب: ابھا میں شادی کی رات دلہن کے والد کی وفات، خاندان میں صف ماتم بچھ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بیٹی کی شادی کرکے اس کی باعزت رخصتی ہر والد کی خواہش ہوتی ہے۔ بیٹیوں والے والدین چاہتے ہیں کہ وہ اپنی زندگی میں اپنی بیٹیوں کے ہاتھ پیلے کریں، مگر سعودی عرب میں ایک والد اپنی بیٹی کی شادی کی رات اچانک انتقال کرگئے۔ اس واقعے کے بعد دونوں خاندانوں میں صف ماتم بچھ گئی۔

سوشل میڈیا پر شائع ہونے والے اس واقعے پر صارفین کی طرف سے افسوس اور گہرے صدمے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے ساتھ ایک انٹرویو میں متوفی حسن بن محمد آل مریع کے بیٹے محمد نے وضاحت کی "ابہا شہر میں میری بہن کی شادی تھی۔ شادی کی رات میرے والد کا انتقال ہو گیا۔ وہ کسی عارضے کا شکار نہیں تھے مگر موت ان پرغالب آئی‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ "وہ ٹھیک ٹھاک تھے اور خیر خواہوں اور مہمانوں کو وصول کر رہے تھے۔ کالیں وصول کر رہے تھے۔ ہم ان کے ساتھ تھے۔ ہم شادی کی تقریب مکمل ہونے کے لیے عشاء کی نماز کا انتظار کر رہے تھے۔ اچانک وہ بغیر کسی کے ساتھ ایک طرف ٹیک لگا کر بیٹھ گئے‘‘

بیٹے نے بتایا کہ اسے ایمبولینس کے ذریعے ہسپتال لے جایا گیا تاہم رات گئے اس کی موت واقع ہو گئی‘‘۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے اس واقعے کی تفصیلات سن کر ہر آنکھ اشک بار ہے۔ سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے سوگوارخاندان کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں