سعودی عرب کا اپنے شہریوں سے فوری طور پر لبنان چھوڑ دینے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے اپنے شہریوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ لبنان کے لیے سفری ہدایات کی پابندی کریں اور ملک میں موجود افراد وہاں سے فوری طور پر نکل جائیں۔

لبنان میں سعودی سفارت خانے نے کہا کہ وہ جنوبی لبنان میں ہونے والی پیش رفت کا قریب سے جائزہ لے رہا ہے اور "تمام شہریوں سے سفری پابندی پر عمل کرنے اور لبنان میں موجود افراد کے لیے فوراً لبنانی سرزمین چھوڑنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔"

گذشتہ ہفتے اسرائیل پر حماس کے حملوں کے بعد لبنان کے اندر موجود فلسطینی گروہوں کی طرف سے راکٹ اور میزائل حملوں کے بعد سرحد پار سے گولہ باری کا تبادلہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں حزب اللہ کے اہداف کے خلاف اسرائیل نے جوابی کارروائی کی تھی۔ گروپ کے مطابق حزب اللہ نے جوابی کارروائی کی ہے اور اس کے کم از کم دس عسکریت پسند ہلاک ہو گئے ہیں۔

کئی دوسرے ممالک نے حالیہ دنوں میں لبنان جانے کے خواہشمند شہریوں کے لیے سفری ہدایات جاری کی ہیں۔ امریکہ نے منگل کے روز امریکی شہریوں کو خبردار کیا کہ وہ وہاں کا سفر نہ کریں اور محکمۂ خارجہ نے ملک میں " سکیورٹی کی غیر متوقع صورتحال" کی وجہ سے غیر ہنگامی سرکاری اہلکاروں کی روانگی کی اجازت دے دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں