غزہ کےہسپتال میں قتل عام کے بعد بائیڈن کا دورہ اردن اور عمان میں ہنگامی اجلاس منسوخ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

غزہ میں ایک ہسپتال پر اسرائیلی فوج کی بمباری میں سیکڑوں افراد کی شہادت کے بعد امریکی صدر جوبائیڈن کا دورہ اردن منسوخ کردیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر نے آج بدھ کو اسرائیل کےہنگامی دورے پر تل ابیب پہنچ رہے ہیں۔ دوسری طرف اردن میں گروپ چار کا آج ہونے والا ہنگامی اجلاس بھی منسوخ کردیا گیا ہے۔

اردن کے وزیر خارجہ ایمن الصفدی نے امریکی صدر جو بائیڈن کا دورہ اردن منسوخ کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمان میں بدھ کو چار فریقی سربراہی اجلاس ہونا تھا جو اب منسوخ کردیا گیا ہے۔

اردن میں امریکی صدر جو بائیڈن، مصری صدر عبدالفتاح السیسی، اردن کے شاہ عبداللہ دوم اور فلسطینی صدر محمود عباس کی موجودگی میں چار طرفہ سربراہی اجلاس منعقد ہونا تھا۔

بائیڈن اسرائیل روانہ

امریکی صدر اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کو خطے کے دیگر خطوں اور ممالک تک پھیلنے سے روکنے کی کوشش میں وائٹ ہاؤس سے اسرائیل روانہ ہوگئے ہیں۔

ایک مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر نے واشنگٹن کے قریب اینڈریوز فوجی اڈے کا رخ کیا جہاں سے وہ تل ابیب جانے والے طیارے میں سوار ہوں گے۔

بائیڈن نے "غزہ کے ایک ہسپتال میں بمباری ہونے والی معصوم جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی خواہش کی۔

ہسپتال پر بمباری میں 500 افراد شہید

غزہ کی وزارت صحت نے بتایا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے الاہلی عرب ہسپتال کے احاطے میں بمباری کے نتیجے میں 500 سے زائد افراد شہید ہو گئے ہیں۔

وزارت صحت نے بتایا کہ اسرائیلی طیاروں نے ہسپتال کو نشانہ بنایا جس میں طبی عملہ، مریض اور پناہ لیے ہوئے عام شہری شہید ہوئے۔

اسرائیلی فوج کے مطابق وہ اس حملے کی رپورٹ کا جائزہ لے رہے ہیں۔

ہسپتال پر حملے کے بعد منظر عام پر آنے والی تصاویر میں بڑے پیمانے پر آگ، تباہی اور زمین پر بکھرے انسانی اعضاء نظر آرہے ہیں۔

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے حملے پر تین روزہ سوگ منانے کا اعلان کیا۔

اسرائیل کی جانب سے غزہ پر فضائی حملوں کے نتیجے میں 7 اکتوبر سے اب تک تین ہزار سے زائد فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔

ناکام راکٹ حملہ

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے اعلان کیا ہے کہ غزہ کے المعمدانی ہسپتال میں دھماکے کی وجہ ’اسلامی جہاد‘ کی جانب سے ایک راکٹ داغنے میں ناکامی کی وجہ سے ہوا۔

پینٹاگان نے کہا ہے کہ اسے ہسپتال پر بمباری سے متعلق رپورٹس کا علم ہے لیکن اس کی کوئی تفصیل نہیں ہے۔

پینٹاگان جس نے اب تک اسرائیل کو فوجی امداد سے لدے پانچ C-17 طیارے بھیجے ہیں نے زور دیا کہ امداد فراہم کرنے کے لیے کوئی پیشگی شرط نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "ہم اسرائیل جیسی تمام جمہوریتوں سے جنگ کے قانون کی پابندی کی توقع رکھتے ہیں"۔

قابل ذکر ہے کہ فلسطینی وزارت صحت نے اطلاع دی ہے کہ کشیدگی کے آغاز سے لے کر اب تک اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں فلسطینیوں کی ہلاکتوں کی تعداد 3000 سے تجاوز کر گئی ہے۔

وزارت صحت کے بیان کے مطابق غزہ کی پٹی میں تقریباً 3000 اور مغربی کنارے میں کم از کم 61 افراد مارے گئے۔

وزارت کے مطابق زخمیوں کی کل تعداد بڑھ کر 13,750 ہو گئی ہے، جن میں 12,500 کے قریب غزہ اور کم از کم 1,250 مغربی کنارے میں زخمی ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں