فلسطین اسرائیل تنازع

چھ خلیجی ملکوں کا غزہ کے لیے 100 ملین ڈالر کی امدادی رقم کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

چھ خلیجی ممالک نے غزہ کے بمباری زدہ متاثرین کے لیے مشترکہ طور پر 100 ملین کی فوری امداد غزہ بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ فیصلہ خلیجی ممالک کے مسقط میں بلائے گئے اجلاس کے دوران کیا گیا ہے۔

خلیجی وزرائے خارجہ نے اس امر پر اتفاق کیا کہ غزہ کی صورت حال کے پیش نظر فوری ریلیف آپریشن کی ضرورت ہے۔ جس کے لیے سب ایک سو ملین ڈالر دینے کا وعدہ کرتے ہیں۔

خیال رہے خلیج ممالک میں بحرین، کویت ، اومان، قطر ، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات شامل ہیں۔ ان ملکوں کے وزرائے خارجہ نے الاھلی ہسپتال غزہ پر اسرائیلی حملے کے بعد اجلاس میں امدادی رقم کا اعلان کیا۔

منگل کی رات غزہ کے اس ہسپتال پر اسرائیل نے ٹارگیٹڈ حملہ کیا تھا۔ جس کے بعد عرب دنیا میں بطور خاص اور باقی دنیا میں بالعموم سخت رد عمل سامنے آیا ہے۔

غزہ میں اب تک گیارہ دنوں میں مجموعی طور 3000 سے زائد فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔

حالیہ دنوں میں خلیجی ممالک نے امدادی سامان سے بھرے جہاز مصر کے العریش ائیر پورٹ بھجوائے تھے تاکہ رفح کے راستے غزہ پہنچائے جا سکیں۔ لیکن اسرائیل نے غزہ کا محاصرہ کر کے رفح کی راہداری کو امدادی کارروائیوں کے لیے غیر موثر بنا دیا ہے۔

خلیجی تعاون کونسل کے سیکرٹری جنرل جاسم محمد البددائیوی نے بین الاقومی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ اسرائیل اور غزہ کے درمیان جنگ کے بڑھاوے کی تمام شکلوں کو روکا جائے تاکہ سویلین آبادی کو بچایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں