طولکرم میں بم دھماکے میں 10 اسرائیلی فوجی زخمی، اسلامی جہاد نے ذمہ داری قبول کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی میڈیا نے اعلان کیا ہے کہ غرب اردن کےشمالی شہر طولکرم کے نور شمس کیمپ میں ہونے والے دھماکے میں 10 اسرائیلی فوجی زخمی ہوئے ہیں، جن میں سے ایک کی حالت تشویشناک ہے۔

دوسری طرف اسلامی جہاد کے عسکری ونگ القدس بریگیڈز نے طولکرم میں اسرائیلی فوجیوں پر حملہ کرنے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

فلسطینی میڈیا نے جمعرات کو بتایا کہ اسرائیلی فورسز نے مغربی کنارے میں طولکرم میں نور شمس کیمپ کو اگلے نوٹس تک بند فوجی زون قرار دے دیا ہے۔

رام اللہ میں العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے کے مختلف علاقوں میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران جھڑپوں کے دوران 6 فلسطینیوں کو شہید کر دیا۔

انہوں نے بتایا کہ اسرائیلی فوج بیت لحم شہر کے قریب دہیشیہ کیمپ میں چھاپے اور گرفتاریاں کر رہی ہے۔ ہمارے نامہ نگار نے مزید کہا کہ فوج نے الخلیل شہر کے علاقے العروب میں بھی چھاپہ مارا اور کئی فلسطینی کارکنوں کو گرفتار کر لیا۔

طولکرم میں اسرائیلی فورسز نے ایک نوجوان کو اس کے والد کا علاج کرنے سے روکنے پر قتل اور باپ کو زخمی کردیا۔

فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے رپورٹ کیا ہے کہ16 سالہ طحہ محمد کو طولکرم کے مشرق میں نور شمس کیمپ سے اس وقت قتل کیا گیا جب اسرائیلی فورسز نے ایمبولینسوں کو اسے اسپتال منتقل کرنے سے روک دیا۔ قابض فوج نے کیمپ پر دھاوا بول دیا اور شہریوں پر براہ راست آتشیں گولیاں برسائیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں