فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیل کی غزہ پر بمباری جاری، حماس کے ہیڈ کوارٹر نشانے پر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

غزہ میں اسرائیلی فوج اور فلسطینی مزاحتمی گروپوں کے درمیان جنگ تیسرے ہفتے میں داخل ہو رہی ہے۔ ہفتے کے روز فلسطینی محکمہ صحت نے بتایا کہ غزہ پر اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں 24 گھنٹوں کے دوران 352 افراد شہید ہو گئے ہیں۔

دوسری جانب حماس کے عسکری ونگ عزالدین القسام بریگیڈ نے عام شہریوں کو نشانہ بنانے کے جواب میں اسرائیلی شہر اشدود پر راکٹ سالو سے بمباری کا اعلان کیا ہے۔ عبرانی اخبار یدیعوت احرونوت نے اطلاع دی ہے کہ اشدود میں راکٹ سائرن جنوب میں چھ گھنٹے کے پرسکون رہنے کے بعد بجے۔

اسرائیلی فوج نے کہا کہ اس کے جنگی طیاروں نے گذشتہ شب غزہ کی پٹی میں حماس کے متعدد ٹھکانوں پر بمباری کی۔ فوج کے ترجمان نے بتایا کہ آپریشنز کمانڈ ہیڈ کوارٹر، اینٹی آرمر میزائل لانچنگ پیڈ، دیگر انفراسٹرکچر اور حماس کے مانیٹرنگ اور اینٹی آرمر میزائل لانچنگ سائٹس کو نشانہ بنایا گیا۔

سنیچر کی صبح فلسطین کی خبر رساں ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ غزہ کی پٹی کے مختلف علاقوں پر اسرائیلی طیاروں کی بمباری میں تقریباً 30 افراد جاں بحق ہو گئے۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق غزہ کی پٹی کے جنوب میں واقع شہر رفح کے متعدد علاقوں کو نشانہ بنایا گیا جس میں کم سے کم سات افراد شہید ہو گئے جب کہ شمال میں واقع جبالیہ قصبے کو نشانہ بنایا گیا بمباری میں کم از کم 14 افراد مارے گئے۔

رفح میں االسلام محلے میں ایک تین منزلہ مکان کو نشانہ بنایا گیا جس میں دو افراد کے جان سے جانے کی اطلاع ہے جب کہ زوروب راؤنڈ اباؤٹ میں ایک مکان کو نشانہ بنانے والے بم دھماکے میں تین بچوں سمیت پانچ افراد شہید اور دیگر زخمی ہوئے۔

اسرائیل ممکنہ زمینی حملے کی تیاری کے لیے غزہ کی پٹی کے قریب ٹینکوں اور افواج کو متحرک کر رہا ہے۔ فلسطینی میڈیا نے ہفتے کے روز اطلاع دی ہے کہ پرتشدد اسرائیلی بمباری نے الفلوجہ ، العودہ ٹاورز، الندا ٹاورز، اور تل الھویٰ کے علاقوں کو نشانہ بنایا۔

فلسطینی میڈیا کے مطابق اسرائیلی بم باری میں زیادہ تر رہائشی مکانات کو نشانہ بنایا گیا۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی طیاروں نے غزہ کی پٹی میں تل الھویٰ کے علاقے کو فائر بیلٹ سے نشانہ بنایا۔

غزہ کی پٹی میں حملے کے آغاز سے اب تک 4,137 افراد شہید ہو چکے ہیں، جن میں سے زیادہ تر عام شہری ہیں۔ شہداء میں 1,660 کے قریب بچے شامل ہیں، وزارت صحت کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق، جب کہ تقریباً 13،300 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں