فلسطین اسرائیل تنازع

زمینی حملے کی تیاری کا جائزہ لینے کے لیے اسرائیلی وزیر دفاع کا غزہ کی سرحد کا دورہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل اور فلسطینی دھڑوں کے درمیان جنگ اپنے تیسرے ہفتے میں داخل ہونے کے بعد، آج ہفتے کے روز وزیر دفاع یوآو گیلنٹ فوجی حکام سے ملاقات کے لیے رات گئے غزہ کی پٹی کی سرحد کے قریب پہنچے۔

اسرائیلی اخبار "یروشلم پوسٹ" نے وضاحت کی کہ گیلنٹ نے غزہ کی پٹی پر ممکنہ زمینی حملہ کرنے کے لیے اسرائیلی افواج کی تیاری کا قریب سے جائزہ لیا۔

آج ہفتے کو ’ٹائمز آف اسرائیل اخبار‘ نے سینیر اسرائیلی حکام کے حوالے سے بتایا کہ حماس تحریک کی طرف سے دو امریکی خواتین کی رہائی سے تحریک کے خلاف اسرائیل کے فوجی منصوبوں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

اخبار نے وضاحت کی ہے کہ حکام کے بیانات ایک ایسے وقت میں سامنے آئے ہیں جب اسرائیل کو غزہ کی پٹی پر اپنے متوقع حملے کو روکنے کے لیے دباؤ کا سامنا ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے غزہ میں "فتح تک لڑنے" کا عہد کرتے ہوئے اس بات کا اشارہ کیا کہ حماس کی طرف سے دو امریکی قیدیوں کی رہائی کے بعد پٹی پر متوقع زمینی حملے سے فوجی بمباری نہیں رکے گی اور نہ ہی پیچھے ہٹے گی۔

کل جمعہ کو حماس نے امریکی یہودی خاتون اور اس کی بیٹی نٹالی کو رہا کیا، جنہیں 7 اکتوبر کو جنوبی اسرائیل پر اچانک حملے میں اغوا کیا گیا تھا۔

اسرائیل ممکنہ زمینی حملے کی تیاری کے لیے غزہ کی پٹی کے قریب ٹینکوں اور فوجیوں کو متحرک کر رہا ہے۔ فلسطینی حکام کے مطابق غزہ پر اس کی بمباری کے نتیجے میں کم از کم 4,137 فلسطینی مارے جا چکے ہیں۔ جن میں سیکڑوں بچے بھی شامل تھے، اس کے علاوہ دس لاکھ سے زائد افراد بے گھر ہوئے ہیں۔

اسرائیلی وزیر دفاع یوو گیلنٹ نے کنیسٹ کمیٹی کو بتایا کہ اسرائیل کو اپنے اہداف کا حصول جلد یا آسان نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ "ہم حماس تنظیم کا تختہ الٹ دیں گے۔ ہم اس کے فوجی اور حکومتی ڈھانچے کو تباہ کر دیں گے۔ یہ کوئی آسان مرحلہ نہیں ہو گا۔ اس کی قیمت ہو گی۔"

انہوں نے کہا کہ اگلا مرحلہ طویل ہوگا لیکن اس کا مقصد ایک "مکمل طور پر مختلف سکیورٹی صورتحال تشکیل دینا ہے جس سے اسرائیل کو غزہ سے کوئی خطرہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک دن نہیں، ایک ہفتہ نہیں اور بدقسمتی سے ایک مہینہ نہیں، ہمیں طویل وقت لگ سکتا ہے"۔

فلسطینی میڈیا نے بتایا ہے کہ اسرائیلی طیاروں نے ہفتے کی علی الصبح شمالی غزہ کی پٹی میں چھ گھروں پر بمباری کی جس کے نتیجے میں کم از کم 8 فلسطینی شہید ور 45 زخمی ہو گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں