"اس کے بال گھنگریالے، سفید اورپیارےہیں"غزہ کا ننھا یوسف جس کی شہادت پر ہرآنکھ اشکبار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ میں گذشتہ سولہ دن سے اسرائیل کی طرف سے مسلط کی گئی تباہ کن بمباری کے نتیجے میں بڑی تعداد میں بچے شہید ہورہے ہیں۔

شہداء میں ایک سات سالہ بچہ بھی ہے جس کی دردناک موت کی تفصیلات پرہرآنکھ اشک بار ہے۔

سات سالہ بچے یوسف کی ماں اپنے بچے کو ہسپتال میں تلاش کرنے آئی تو ڈاکٹروں کو کہتی "میرے بیٹے یوسف کی عمر 7 سال ہے۔ اس کے بال گھنگریالے، سفید اور پیارے ہیں۔"

اس تلاش کے دوران اسے پتا چلا کہ اس لا لخت جگراسرائیلی بمباری میں شہید ہوچکا ہے۔ ننھے یوسف کی شہادت کے اس تکلیف دہ صدمے نے دنئا کو رلا دیا۔

مشہور شخصیات سمیت سوشل میڈیا پر ہزاروں لوگوں نے ننھے یوسف کی تصویر شیئر کی اور اسرائیلی فوج کی وحشت اور بربریت کی مذمت کی ہے۔ تصویر اور ویڈیو شیئر کرنے والوں میں شامی اداکار معتصم النہار بھی شامل ہیں۔

معتصم نے مرحوم بچے کی ایک تصویر پوسٹ کی اور اس پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ "یہ یوسف ہے جس کے گھنگریالے، سفید اور پیارے بال ہیں"۔ اس کے ساتھ صدمے سے نڈھال کی فریاد بھی سنتی جا سکتی ہے‘‘۔

پھرمعتصم النہار نے مزید کہا کہ "خدا تم پر رحم کرے، میرے پیارے اور تیرے قاتل سے بدترین انتقام لے"۔

اس پوسٹ پر بہت سےلوگوں نے اپنا رد عمل دیتے ہوئے شدید صدمے کا اظہار کیا۔

"ایک ایسی فلم جس نے آسکر نہیں جیتا"

قابل ذکر ہے کہ مذکورہ ویڈیو سوشل میڈیا پر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور یہ واقعہ چند روز قبل پیش آیا جس میں ایک غمزدہ ماں نے ڈاکٹروں کے ہمراہ اپنے 7 سالہ کھوئے ہوئے بیٹے کی تلاش شروع کی ۔ اسے پتا چلا کہ اس کا بچہ شہداء میں شامل ہے۔

جب وہ مل تو ماں کے لیے اس کی موت کسی صدمے سے کم نہیں تھی۔ وہ اپنے چھوٹے بیٹے اور شوہر کےساتھ ہسپتال میں تھی اور رونے کے سوا کچھ نہیں کرسکتی تھی۔

یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے پر وائرل ہو رہی ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ یہ "ایک ایسی فلم اس نے بس آسکر ایوارڈ نہیں جیتا"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں