سعودی عرب: کون سی چار علامات ظاہرہونے پر طلباء کو الگ تھلگ کرنا ضروری ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی پبلک ہیلتھ اتھارٹی "وقایہ" نے بتایا ہے کہ 4 کیسز میں طلباء کو دوسرے ساتھیوں اور اساتذہ سے الگ کرنا ضروری ہے۔

پبلک ہیلتھ اتھارٹی کے مطابق ان چار علامات میں زیادہ درجہ حرارت، سانس کی علامات (کھانسی یا سانس لینے میں تکلیف)، نظام انہضام کی علامات۔ (پیٹ میں درد، اسہال، یا الٹی) اور جلد پر خارش جیسی علامات شامل ہیں۔

اگر اسکول کسی متعدی بیماری کے پھیلنے کے امکان کے بارے میں فکر مند ہے تو اسے مشورہ اور مدد حاصل کرنے کے لیے اسکولوں میں متعدی کیسز کے بارے میں مطلع کرنا چاہیے۔

تاکہ یہ دیکھا جا سکے کہ آیا طلباء کو کسی احتیاطی اقدام کی ضرورت ہے یا نہیں۔ اس کے لیے اسکول انتظامیہ کو صحت کے حکام کے ساتھ مشورہ کرنا ہو گا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ انفیکشن پھیلنے کے 6 ذرائع ہیں۔ جن میں نظام ہاضمہ سے خارج ہونے والی رطوبتیں اور فضلہ، جیسے متعدی اسہال، گیسٹرو، ہیپاٹائٹس اے وائرس، یا نظام تنفس (ناک اور منہ کی رطوبت) زکام اور انفلوئنزا، جلد کے انفیکشن، جیسے ہرپس، خارش، اور چکن پاکس جیسی علامتی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں