مشرق وسطیٰ

بمباری میں زیر حراست 50 یرغمالی ہلاک ہو گئے ہیں: حماس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مزاحمتی تنظیم حماس نے جمعرات کو بتایا ہے کہ غزہ پر اسرائیلی حملوں میں تقریباً 50 یرغمالی جان سے جا چکے ہیں۔

تنظیم کے عسکری بازو عزالدین القسام بریگیڈ نے اپنے ٹیلی گرام چینل پر ایک بیان میں کہا کہ غزہ کی پٹی میں صیہونی حملوں اور قتل عام کے نتیجے میں مرنے والے صہیونی قیدیوں کی تعداد تقریباً 50 تک پہنچ گئی۔

اے ایف پی کے مطابق یہ دعویٰ ایک ایسے وقت پر کیا گیا ہے جب اسرائیل نے رات گئے ایک ’ٹارگٹڈ چھاپے‘ کے دوران ٹینک، فوجی اور بکتر بند بلڈوزر علاقے میں بھیجے تھے۔ اے ایف پی کے مطابق وہ حماس کے اس دعویٰ کی فوری تصدیق نہیں کر سکا۔

دوسری جانب اقوام متحدہ نے متنبہ کیا ہے کہ غزہ میں ’کہیں بھی محفوظ نہیں۔‘ اقوام متحدہ کی انسانی امداد کی رابطہ کار لین ہیسٹنگز نے کہا ہے کہ اسرائیلی فوج کی جانب سے غزہ شہر کے لوگوں کو وہاں سے نکلنے کے پیشگی انتباہ سے کوئی فرق نہیں پڑا۔

انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ جب انخلا کے راستوں پر بمباری کی جاتی ہے تو ’لوگوں کے پاس ناممکن انتخاب کے سوا کچھ نہیں بچتا۔ غزہ میں کہیں بھی محفوظ نہیں۔‘

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں