امریکہ ایرانی متاثرین کو 420 ملین ڈالر ہرجانہ ادا کرے: ایرانی عدالت کا فیصلہ

عدالتی فیصلہ 50 امریکی سفارتی یرغمالی چھڑانے کے آپریشن کے متاثرہ خاندانوں کی پٹیشن پر سنایا گیا۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران کی عدالت نے حکم دیا ہے کہ امریکہ کے یرغمالی رہا کرانے کے متاثرہ ایرانیوں کو 420 ملین ڈالر ہرجانے کے طور پر ادا کیے جائیں۔ ایرانی عدالت کا یہ فیصلہ تقریبا 44 سال قبل تہران کے امریکی سفارت خانے میں یرغمال بنائے گئے امریکیوں کی رہائی کے لیے امریکی آپریشن کے متاثرہ خاندانوں کے حوالے سے سامنے آیا ہے۔

ایران میں امریکہ کے حمایت یافتہ شاہ ایران کے خلاف آنے والے انقلاب کے بہت تھوڑے دنوں بعد ایرانی طلبہ تہران میں امریکی سفارت خانے پر چڑھ دوڑے تھے، جنہوں 444 دن تک امریکی سفارتخانے کے عملے کے 50 ارکان کو یرغمال بنایا تھا۔

سفارت خانے کے عملے کو یرغمال بنانے والے ایرانی طلبہ سابق شاہ ایران کو ایران کے حوالے کرنے کا مطالبہ کر رہے تھے جو ایران سے بھاگنے کے بعد امریکہ میں زیر علاج تھے۔

امریکہ نے اپنے یرغمال بنائے گئے سفارت کاروں کو رہا کرانے کے لیے ' پنجہ عقاب ' کے نام سے خفیہ آپریشن کیا۔ لیکن یہ آپریشن بری طرح ناکام ہو گیا۔ ایک طرف ریت کا ایسا طوفان اٹھا کہ امریکہ کمانڈوز کے ساتھ آئی مشینری کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

دوسری جانب اپنے آپریشن کرنےوالے اہلکاروں کے پیچھے ہٹنے کے دوران 2 امریکی طیارے آپس میں ہی ٹکرا گئے۔ طیاروں کے اس ٹکراو سے آٹھ امریکی فوجی ہلاک ہو گئے۔

ایرانی عدالت کے فیصلے کو 'میزان آن لائن' نامی خبر رساں ادارے نے رپورٹ کرتے ہوئے لکھا ہے ' امریکیوں نے ایران کی ایک عام مسافر بس پر اسی دوران بوکھلاہٹ میں حملہ کر دیا۔ '

خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق عدالتی فیصلہ امریکی آپریشن کے دوران متاثر افراد کے لواحقین اور خاندانوں کی طرف سے دائر کردہ پٹیشن پر سامنے آیا ہے۔ تاہم اس رپورٹ میں ایرانی متاثرہ افراد یا خاندانوں کی تعداد نہیں بتائی گئی ہے۔

البتہ انہی کی دائر کردہ درخواست پر ایرانی عدالت نے امریکہ کو 420 ملین ڈالر مذکورہ خاندانوں کو ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔

ایرانی میڈیا کے مطابق امریکیوں نے ایرانی انقلاب پاسدران میں سے ایک محافظ کو اس وقت گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جب وہ امریکی آپریشن میں تباہ ہوئے امریکی فوجی آلات کی حفاظت پر مامور تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں