اسرائیلی فوج کی غزہ میں زمینی کارروائیوں میں توسیع، حماس کے 600 اہداف کو نشانہ بنایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فوج نے پیر کو کہا کہ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی دفاعی افواج (آئی ڈی ایف) نے اپنی زمینی کارروائیوں میں اضافہ جاری رکھا اور گذشتہ چند دنوں کے دوران فلسطینی عسکریت پسند گروپ حماس کے 600 سے زیادہ فوجی اہداف کو نشانہ بنایا۔

آئی ڈی ایف نے ایک بیان میں کہا، "غزہ کی پٹی میں راتوں رات زمینی کارروائیاں جاری رہیں۔ غزہ کی پٹی میں دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران آئی ڈی ایف کے فوجیوں نے درجنوں دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا جنہوں نے عمارات اور سرنگوں میں رکاوٹیں کھڑی کر رکھی تھیں اور فوجیوں پر حملہ کرنے کی کوشش کی۔"

بیان میں مزید کہا گیا: "ایک واقعے میں آئی ڈی ایف کے زمینی دستوں کی رہنمائی میں ایک آئی ڈی ایف ہوائی جہاز نے حماس دہشت گرد تنظیم سے تعلق رکھنے والی عمارت کے اندر ایک اسٹیجنگ پوسٹ (گاڑیوں یا جہازوں کے رکنے کا مقام) کو نشانہ بنایا جس میں حماس کے 20 سے زیادہ دہشت گرد موجود تھے۔"

آئی ڈی ایف نے یہ بھی کہا کہ اس نے گذشتہ چند دنوں میں حماس کے 600 سے زیادہ اہداف کو نشانہ بنایا جن میں ہتھیاروں کے ڈپو اور ٹینک شکن میزائل داغنے کے درجنوں مقامات کے ساتھ ساتھ حماس کے زیرِ استعمال ٹھکانے اور اسٹیجنگ گراؤنڈ (فوجی اور دفاعی منصوبہ بندی کرنے کے مقامات) بھی شامل تھے۔

آئی ڈی ایف نے مزید کہا، "راتوں رات فوجیوں نے الازہر یونیورسٹی کے علاقے میں مسلح دہشت گردوں اور ٹینک شکن میزائل داغنے کے مقام کی نشاندہی کی اور ان پر حملہ کرنے کے لیے ایک لڑاکا طیارے کی رہنمائی کی۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں