سعودی وزارت ثقافت کے زیراہتمام "درعیہ سنٹر فار فیوچر آرٹس" کا قیام

نیو میڈیا آرٹس کے لیے یہ عرب دنیا کا پہلا مرکز ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت ثقافت کے زیراہتمام مستقبل کے فنون کے لیے درعیہ سینٹر کھولنے کی تیاری کر رہی ہے، جو کہ عرب دنیا میں New Media Arts" کے لیے پہلا مرکز ہوگا ہے۔

وزارت ثقافت نے نئے میڈیا آرٹس کے شعبے میں ابھرتے ہوئے فنکاروں کی خاطر تعلیمی پروگرام میں شرکت شروع کرنے کا اعلان کیا، جسے مرکز میں نافذ کیا جائے گا۔

مرکزمختلف پروگرام پیش کرے گا۔ سب سے زیادہ قابل ذکر نئے میڈیا آرٹس کے میدان میں ابھرتے ہوئے فنکاروں کے لیے ایک طویل مدتی تعلیمی پروگرام ہے، جسے فرانس میں نیشنل اسٹوڈیو آف کنٹیمپریری آرٹس لی فریسنائے کے تعاون سے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

یہ پروگرام ایک سال کا تخلیقی پیداواری تربیتی پروگرام ہے جو ابھرتے ہوئے فنکاروں کو جدید ترین پیشہ ورانہ سازوسامان تک رسائی، پیداواری بجٹ کے ساتھ ساتھ بین الضابطہ سیکھنے کے وسیع مواقع فراہم کرتا ہے، جس میں نظریاتی، تصوراتی اور تکنیکی خدمات سیکھنے کے مواقع فراہم کیے جائیں گے۔

پروگرام پوری دنیا سے ابھرتے ہوئے تخلیق کاروں کو اپنی طرف متوجہ کرے گا جس میں مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ کے لوگوں پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ انہیں دنیا کے معروف نئے میڈیا اور ڈیجیٹل فنکاروں کے ساتھ کام کرنے کا ایک غیر معمولی موقع فراہم کرے گا، انہیں اپنے فن پاروں کی تیاری کے لیے ایک سال تک مکمل تعاون بھی فراہم کرے گا۔

پروگرام میں حصہ لینے کے لیے درخواست دہندگان کی زیادہ سے زیادہ عمر 35 سال ، تعلیم گریجوایشن اور ڈیجیٹل اور نئے میڈیا آرٹ کی تیاری اور تخلیق کرنے کا تجربہ ضروری ہے۔

درعیہ سینٹر فار فیوچر آرٹس کا مقصد فن، سائنس اور ٹیکنالوجی کے سنگم پر تخلیقی مشق کے لیے تعلیم اور بااختیار بنانے اور پوری دنیا کے فنکاروں کی تخلیقی صلاحیتوں کے لیے وسیع جگہیں پیدا کرنا ہے۔

مرکز کا صدر دفتر تاریخی شہر درعیہ میں قائم کیا گیا ہے جو تخلیقی فنکارانہ اظہار کے مواقع پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ مملکت کے منفرد ورثے کے تحفظ کے لیے وزارت ثقافت کے عزم کی عکاسی کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں