شام میں فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا: اسرائیلی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کی فوج نے پیر کو کہا کہ اس نے شام کے اندر فوجی تنصیبات پر حملے کیے ہیں کیوں کہ یہ خدشہ بڑھ رہا ہے کہ حماس کے خلاف اس کی جنگ ایک وسیع علاقائی تنازع کو جنم دے سکتی ہے۔

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ ’تھوڑی دیر قبل، ایک اسرائیلی لڑاکا طیارے نے لانچروں پر حملہ کیا‘جہاں سے راتوں رات اسرائیلی علاقے کی طرف حملے شروع ہوئے۔

اسرائیلی فوج کے بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی جیٹ نے ’شام کی سرزمین میں فوجی انفراسٹرکچر کو نشانہ بنایا۔‘

فوج نے مزید تفصیلات فراہم نہیں کیں لیکن اسرائیلی پبلک براڈکاسٹر کان نیوز کے مطابق یہ حملے جنوبی شام کے شہر درعا کے قریب کیے گئے۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس وار مانیٹر نے کہا کہ اسرائیل نے قریبی مقبوضہ گولان کی پہاڑیوں پر گولہ باری کے جواب میں درعا صوبے میں "آرٹیلری بٹالین" سمیت فوج کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔

غزہ میں حماس کے خلاف اسرائیل کی جنگ کے علاقائی نتائج کے بارے میں خدشات بڑھ رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں