غزہ سے محدود انخلا کے لیے قطر کی ثالثی میں مصر، حماس اور اسرائیل کے درمیان معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

قطر نے امریکہ کے ساتھ مل کر مصر، اسرائیل اور حماس کے درمیان ایک معاہدے پر ثالثی کی ہے جس سے غیر ملکی پاسپورٹ رکھنے والوں اور کچھ شدید زخمی افراد کو غزہ سے باہر نکلنے جانے کی اجازت دی جائے گی۔

ذرائع نے بدھ کو برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ معاہدے کے تحت غیر ملکی پاسپورٹ ہولڈرز اور کچھ شدید زخمی افراد کو مصر اور غزہ کے درمیان رفح بارڈر کراسنگ کے ذریعے باہر نکلنے کی اجازت دی جائے گی۔

تاہم بارے میں کوئی ٹائم لائن نہیں ہے کہ رفح کراسنگ انخلا کے لیے کب تک کھلی رہے گی۔

ذرائع نے کہا ہے کہ یہ معاہدہ مذاکرات کے تحت حماس کے ہاتھوں یرغمال بنائے گئے افراد کی رہائی یا خوراک، پانی، ایندھن کی سپلائی جیسے دیگر معاملات سے الگ ہے۔

گروپ کے مسلح ونگ القسام بریگیڈز کے ترجمان ابو عبیدہ نے ٹیلی گرام ایپ پر ایک ویڈیو میں کہا کہ حماس نے ثالثوں کو بتایا ہے کہ وہ جلد ہی اسرائیل پر حملے کے دوران 200 یا اس سے زیادہ قیدیوں میں سے کچھ کو رہا کر دے گا۔ تاہم انہوں نے قیدیوں کی تعداد یا ان کی شہریت کے بارے میں مزید تفصیلات نہیں بتائیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں