اسرئیلی فوجی کو رہا نہیں کیا، چند دنوں میں دیگر ملکوں کے مغوی رہا کیے جا سکتے ہیں

اب تک اسرائیل کی 22 فوجی گاڑیا ں تباہ کی ہیں۔ زیر آب کارروائیوں میں میزائل کا استعمال کر چکے: ترجمان القسام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی تحریک مزاحمت حماس کے عسکری ونگ نے کہا ہے کہ اس کی طرف سے اگلے چند دنوں میں مغویوں کو رہائی دے دی جائے گی۔ یہ بات مغویان کی رہائی کے لیے مذاکرات کاروں کے توسط سے بتائی گئی ہے۔ 22 اسرائیلی فوجیوں گاڑیاں تباہ کرنے کا بھی بتایا گیا ہے اور زیر آب کارروائیوں کے لیے پہلی بار سمندر میں میزائل استعمال کرنے کا بھی القسام بریگیڈ کا دعویٰ سامنے آیا ہے۔

اس سلسلے میں حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈ کے ترجمان کا ایک ویڈیو بیان بھی منگل کے روز جاری کیا گیا ہے۔

القسام ترجمان نے اس کے علاوہ کوئی تفصیلات نہیں بتائی ہیں۔ جن سے اندازہ ہو سکے کہ دوسرے ملکوں کے مغویان کی تعداد کتنی ہے ان کا کس کس ملک سے تعلق ہے۔

القسام ونگ کے ابو عبیدہ نے اسی بیان میں یہ بھی بتایا ہے کہ ان کے مزاحمت کاروں نے اسرائیل کے ساتھ تین محاذوں پر تصادم شروع کر رکھا ہے اور القسام اس پوزیشن میں ہے کہ مزید اسرائیلی فوجیوں کو ہلاک یا زخمی کر سکے۔

ترجمان ابو عبیدہ کے مطابق القسام بریگیڈ نے اب تک ان محاذوں پر اسرائیلی فوج کے 22 وہیکلز کو تباہ کیا ہے اور نیوی سے واببستہ مزاحمت کاروں نے آصف نامی میزائل زیرآب استعمال کیا ہے۔

القسام بریگیڈ کی طرف سے زیر آب میزائلوں کے استعمال کی یہ اطلاع پہلی بار سامنے آئی ہے۔تاہم ابھی کسی غیر جانبدار ذریعے یا جنگ کے بڑے فریق اسرائیلی کے علاوہ امریکی ذریعے نے القسام ترجمان کے اس دعوے کی تصدیق کی ہے نہ تردید کی ہے۔

البتہ اسرائیلی فوج نے حماس کی جانب سے ایسے کسی حملے کے بارے میں لا علمی ظاہر کی ہے۔ دوسری جانب القسام بریگیڈ کے ترجمان ابو عبیدہ نے اس امر کی تردید کی ہے کہ حماس نے کسی مغوی اسرائیلی فوجی کو رہا کیا ہے۔

ترجمان کے مطابق حماس کے علاوہ دوسرے گروپوں کے پاس بھی اسرائیلی مغوی موجود ہیں ، اس لیے ہو سکتا ہے کہ کسی دوسرے گروپ نے کسی ایک کو رہا کر دیا ہو تاہم ہمارے پاس ایسی کوئی تصدیق نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں