فلسطین اسرائیل تنازع

حماس کو مرنا ہے یا سرنڈر کرنا ہے، تیسری کوئی آپشن نہیں : اسرائیلی وزیر دفاع کا انتباہ

جنگ بندی نہیں کی جائے گی ۔ آخری فتح تک حملے جاری رہیں گے: نیتن یاہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی وزیر دفاع یووا گیلنٹ نے پوری ہلاکت خیزی کے ساتھ کہا ہے کہ ' حماس کو مرنا یا غیر مشروط طور پر اسرائیل کے سامنے سرنڈر کرنا ہوگا۔ '

بدھ کے روز وزیر دفاع نے یہ دھمکی اس وقت دی ہے جب ان کے ملک کے فضائیہ ، فوج اور بحریہ پوری طرح غزہ پر حملہ آور ہے اور ہزاروں فلسطینی شہری غزہ میں جام شہادت نوش کر چکے ہیں۔ ان میں صرف فلسطینی بچوں کے شہید ہونے کی تعداد چار ہزار کو چھو رہی ہے۔

اسرائیل کی اس اندھی بمباری سے غزہ کی تباہی اس حالت پہنچ چکی ہے کہ غزہ کے واحد کینسر ہسپتال سمیت 35 تمام ہسپتالوں میں سے تقریباً نصف ہسپتال بند ہو چکے ہیں۔ کہ ان ہسپتالوں کو پانی ، بجلی اور ایندھن کی فراہمی سے لے کر ادویات اور طبی آلات تک کی فراہم معطل ہوئے کئی کئی ہفتے ہو رہے ہیں۔

اسرائیلی وزیر دفاع ، وزیر اعظم اور دوسرے اہم عہدے دار غزہ میں عام شہریوں اور اور بچوں کے قتل عام کو حماس کے خاتمے کے معنی دے کر امریکہ اور کئی مغربی مملاک کو ساتھ ملائے ہوئے ہیں جو اسرائیل کو جنگی و سفارتی اور سیاسی مدد دے رہے ہیں۔ اسی سلسلے میں امریکی وزیر خارجہ ایک بار پھر مشرق وسطیٰ اور ترکی کے دورے پر پہنچ رہے ہیں تاکہ خطے کے ملکوں کو اسرائیل بارے خاموش رہنے پر قائل کرتے رہیں اور زیر دباو بھی رکھ سکیں۔

جبکہ سلامتی کونسل میں جنگ بندی سے متعلق آنے والی ہر قرارداد کو ویٹو کر رہے ہیں۔ اس کامل امریکی و مغربی حمایت کے ماحول میں ہزاروں فلسطینیوں کو ہلاک کرنے والے اسرائیل نے اسے پھر حماس کے مرنے سے تعبیر کرتے ہوئے ایک طرح سے غزہ پر بمباری جاری رکھنے کی دھمکی دی ہے۔

اسرائیلی وزیر دفاع نے بدھ کے روز اپنی ایک تقریر میں کہا حماس کے مرنے یا سرنڈر کرنے کی دو آپشنز کے علاوہ کوئی تیسری آپشن موجود ہی نہیں ہے۔ اسی دوران وزیر اعظم نیتن یاہو نے بھی آخری فتح تک غزہ پر بمباری جای رکھنے کے موقف کا اعادہ کیا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل ایک سے زائد بار غزہ میں جنگ بندی کرنے کی اپیل کر چکے ہیں، انہیں بھی اسرائیلی بمباری کے بارے میں بین الاقوامی قوانین کی بات کرنے کی وجہ سے شدت پسندانہ مطالبے کا سامنا کرنا پڑا اور اقوام متحدہ میں اسرائیلی سفیر نے سیکرٹری جنرل ہی کے مستعفی ہونے کا مطاالبہ کر دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں