رام اللہ پر اسرائیلی فوج کا چھاپہ، ’’العربیہ‘‘پر فائرنگ

غرب اردن میں چھاپے اور گرفتاریوں کا سلسلہ نابلس اور متعدد فلسطینی مہاجر کیمپوں تک پھیل گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے غرب اردن میں اپنی گرفتاریوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے جبکہ قابض فوج رام اللہ، نابلس سمیت متعدد فلسطینی مہاجر کیمپوں میں اپنی چھاپہ مار کارروائیوں میں تیزی لا رہی ہے۔

جمعرات کے روز اسرائیلی فوج کی تازہ ترین چھاپہ مار کارروائی کو ’’العربیہ‘‘اور’’الحدث‘‘کے کیمروں نے ریکارڈ کر لیا۔ اس دوران اسرائیلی فوج نے رام اللہ کے علاقے میں دراندازی کرتے ہوئے مختلف سمتوں میں اندھا دھند فائرنگ کی۔

فائرنگ کے دوران اسرائیلی فوجیوں نے علاقے کی ایک عمارت پر بنائی گئی براڈکاسٹ کنوپی کو بھی نشانہ بنایا۔ چھاپے کے کچھ دیر بعد اسرائیلی فوج رام اللہ سے باہر نکل گئی۔

فلسطینی نیوز ایجنسی کے مطابق اسرائیلی فوج نے نابلس سے چھ فلسطینیوں کو گرفتار کیا، رام اللہ کی الطیرہ کالونی پر دھاوا بولا۔ خبر رساں ایجنسی کے بقول الطیرہ کالونی میں اسرائیلی فوج اور نوجوانوں کے درمیان جھڑپوں کے دوران قابض فوج نے ساؤنڈ بم اور اشک آور گیس کے گولے فائر کیے۔

رام اللہ میں اسرائیلی دراندازی
رام اللہ میں اسرائیلی دراندازی

اسرائیلی فوج نے جنوبی اریحا کی عقبہ جبر اور شمالی اریحا کی عین السلطان کالونیوں میں بھی چھاپے مار کر تین فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا۔

فلسطین الیوم نامی ویب گاہ کے مطابق شمالی رام اللہ کے الجلزون کیمپ پر بھی چھاپہ مار کارروائی کی گئی۔

جمعرات ہی کے روز غزہ کی پٹی پر زمینی کارروائی کے جلو میں علی الصباح ہی اسرائیلی فوج نے شدید گولا باری کی۔ غزہ شہر کے ساحل پر اسرائیلی بحریہ کی لڑاکا کشتیوں نے متعدد گولے داغے۔

ادھر غزہ میں زمینی کارروائی کے دوران ہلاک ہونے والے اسرائیلی فوجیوں کی تعداد 17 ہو گئی ہے، جبکہ اخبار ’یروشلم پوسٹ‘ کے مطابق اسرائیلی فوج نے شمالی غزہ کی پٹی میں کی جانے والی زمینی کارروائی کے دوران ایک اسرائیلی فوجی ہلاک ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں