فلسطین اسرائیل تنازع

فلسطینی رہنما اسماعیل ہنیہ کی ایرانی سپریم لیڈر خامنہ ای سے ملاقات

خامنہ ای کی طرف سے صہیونی جرائم کے خلاف حماس کی حمایت کا اعادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حماس رہنما اسماعیل ہنیہ نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ سے ملاقات کی ہے۔ غزہ کی صورت حال اور خطے کے منظر نامے کے حوالے سے یہ ملاقات انتہائی اہم رہی۔ ایران کے سرکاری خبر رساں اداے ' ارنا ' نے اس ملاقات کو اتوار کے روز رپورٹ کیا ہے۔

'ارنا' کے مطابق ملاقات میں ہنیہ نے ایرنی سپریم لیڈر کو غزہ اور اس سے متعلق امور کے بارے میں تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا۔ نیز مغربی کنارے میں سامنے آنے والاے واقعات کے بارے میں 'اپڈیٹ ' کیا۔ کہ کس طرح اسرائیلی جرائم میں مغربی کنارے میں بھی تیزی آ رہی ہے۔

علی خامنہ ای نے اس موقع پر فلسطینی عوام کی ہمت و جرات کے لیے ان تحسین کی، تاہم انہوں نے غزہ میں جاری اسرائیلی جرائم پر افسوس ظاہر کیا۔ 'ارنا' کے مطابق انہوں نے اسرائیلی جرائم کو امریکی اور بعض دوسرے مغربی ملکوں کی حمایت کی بدولت قرار دیا۔

ایرنی سپریم لیڈر نے اس موقع پر فلسطین کے بارے میں اپنی مستقل پالیسی کا ذکر کیا اور صہیونی قوتوں کے خلاف فلسطینی مزاحمت کے لیے اپنی حمایت کا اعادہ کیا۔

واضح رہے اسماعیل ہنیہ کی علی خامنہ ای کے ساتھ غزہ میں ایک ماہ سے جاری صورت حال کے دوران پہلی ملاقات تھی۔ اس سے قبل ان کی ایک ملاقات ماہ جون میں رپورٹ کی گئی تھی۔

تہران کو فلسطینی تحریک مزاحمت حماس کے اہم ترین حامی ملکوں میں نمایاں حیثیت حاصل ہے۔ رواں ماہ کے دوران ایرانی حمایت یافتہ دورسی مزاحمتی گروپ بھی کھل کر حمایت کا اعلان کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں