بحیرہ احمر کے ساحل پر واقع سعودی عرب کی خوبصورت وادی الریم دلفریب قدرتی حسن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے شمال میں واقع وادی الریم کا شمار مملکت کے قدرتی اور پرفضا مقامات میں ہوتا ہے۔ یہ علاقہ اپنے قدرتی حسن کی بہ دولت سیاحوں کے لیے بے پناہ کشش رکھتا ہے۔ وادی الریم بہ یک وقت پہاڑوں، ٹیلوں، نالوں، ساحل اور سمندر کے نظاروں کو اپنی آغوش میں لیے ہوئے ہے۔

وادی ریم کا بہتا پانی بحیرہ احمر کے ساحل پر جازان کے قریب واقع بحیرہ شقیق میں گرتا ہے۔ وادی الریم اور اس کے بہتے پانی کا بحیرہ احمر سےملاپ بھی ایک دلکش منظر تخلیق کرتا ہے۔

ایک مقامی فوٹو گرافر رشود الحارثی نے حال ہی میں اس وادی کے دلفریب نظاروں کی عکس بندی کرکے انہیں سوشل میڈیا کی زینت بنایا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ "گذشتہ روز صبح کے وقت علاقے میں ہونے والی شدید بارش سمندر سے آنے والے بادل کی وجہ سے تھی جو عسیر کے علاقے الحریضہ کے مرکز سے نکل کر مشرق کی طرف بڑھا۔ یہ بادل وادی الریم، جازان کے علاقے کے قریب شقیق کےساحل اور وادی عرعر میں جم کر برسا۔

انہوں نے مزید کہا کہ "میں سیاحتی مقامات پر بارش کے اثرات کی عکس بندی کا بہت شوقین ہوں۔ میں ایسے قدرتی مناظر کی دلکشی کو شائقین تک پہنچانے کے لیے تصاویر کو سوشل میڈیا کے ذریعے پھیلانے کا خواہاں ہوں‘‘۔

الشقیق کا علاقہ

قابل ذکر ہے کہ شقیق کا علاقہ زمین کا ایک ہموار ساحلی میدان ہے جو ساحل کے ساتھ ساتھ پھیلا ہوا ہے۔شمال کی نسبت اگر ہم جنوب میں درب بنی شعبہ کی طرف نکلیں تو یہ علاقہ پھیلتا جاتا ہے۔

جنوب کی نسبت شمال میں حلی اور القحمہ نسبتا تنگ علاقے ہیں۔اس کی بلندی زیادہ نہیں بلکہ ٹیلوں پر مشتمل علاقے میں چھوٹی چھوٹی چوٹیاں دکھاتی دیتی ہیں۔

ساحل کے قریب الحبت کے علاقے میں ریت کے چھوٹے چھوٹے ٹیلے بھی پاجاتے ہیں ساحلوں کی نمی کی وجہ سے ساحل کے قریب جڑی بوٹیوں والے پودے بھی پائے جاتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں