فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ میں ہزاروں بچوں کی ہلاکت اخلاقی ناکامی ہے، فوری جنگ بندی کی جائے۔ ریڈ کراس سربراہ

ایک ماہ کی بمباری نے سب کچھ تباہ کر دیا۔ ملنے والی امداد لوگوں کے زندہ رہنے کے لیے کافی نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

انسانی خدمت اور مدد کے بین الاقوامی ادارے ریڈ کراس نے غزہ میں بچوں کی ہزاروں کی تعداد میں ہلاکتوں کی پروا نہ کرنے کو اخلاقی دیوالیہ پن اور اخلاقی ناکامی قرار دی ہے۔ ریڈ کراس نے غزہ میں شہریوں پر بمباری کے طویل اور خوفناک ایک ماہ کو اب ختم کر دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

' ایک ماہ کی اس بمباری سے بد ترین نقصان ہوا ہے۔ اب ضرورت ہے کہ اسے روکا جائے۔' یہ بات انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈ کراس ' کی طرف سے منگل کے روز ایک جاری کردہ بیان میں کہی ہے۔

'پورا ایک ماہ اسرائیل اندھا دھند اور انتھک انداز میں غزہ کی شہری آبادی پر بمباری کرتا رہا اور بعد ازاں اس میں زمینی حملے کا اضافہ کر دیا۔'

غزہ میں محکمہ صحت کے مطابق اب تک 10300 لوگ جاں بحق ہو چکے ہیں۔ بھاری بمباری نے سول افرسٹرکچر کو بھی تباہ کر دیا ہے۔ جس نے آنے والی فلسطینی نسلوں کے لیے سخت مصائب کا بیج بو دیا ہے۔

ریڈ کراس کی سربراہ میرجانا سپولیجارک وہ فلسطین میں بچوں پر گذرنے والی مصیبت کو دیکھ کر بطور خاص صدمے میں ہیں۔

'ان بچوں کے لیے بھی میں صدمے میں ہوں جنہیں ان کے خاندانوں سے جدا کر دیا گیا اور غزہ میں یرغمال بنایا گیا۔ انہیں جلد رہا کیا جانا چاہیے'انہوں نے اپنے بیان میں کہا۔

'ریڈ کراس کے سرجنز نے ایسے بچوں کی سرجری کی ہے جن کے جسم بہت زیادہ جل چکے تھے۔ زخمی اور ہلاک ہو چکے بچوں کی تصاویر ہم سب کو ہمیشہ تکلیف پہنچائیں گی۔ یہ ہماری سب کی اخلاقی ناکامی کے سوا کچھ نہیں ہے۔'

ان کا کہنا تھا ۔ ہم اس سارے تصادم میں کوئی کردار ادا نہیں کر سکتے ہم محض غیر جانبدار اداکار ہیں۔ ہم مستقبل کے لیے سہولتکاری کر سکتے ہیں کہ رہائی کے لیے آپریشن اور کوششوں کو آسان بنایا جا سکے۔ تاہم ہماری کوششیں جاری رہیں گی کہ حماس ریڈ کراس کے لوگوں کو یرغمال بنائے ہوئے افراد سے ملنے کی اجازت دے۔'

ریڈ کراس نے معاملے کے تمام فریقوں سے کہا ہے کہ وہ بین الاقوامی قوانین کے مطابق اپنی ذمہ داری ادا کریں۔ اس میں انسانی بنیادوں پر بنے قوانین بھی شامل ہیں جو تقاضا کرتے ہیں کہ فوجی آپریشن میں شہریوں کو کچھ نہ کہا جائے۔ '

ریڈ کراس کی سربراہ نے کہا ' زیر محاصرہ غزہ میں لوگ پانی اور خوراک سمیت ہر چیز سے محروم کر دیے گئے ہیں۔ ان کے لیے آنے والی امداد ان کے زندہ رہنے کے لیے کافی نہیں ہے۔ ریڈ کراس سربراہ نے ہسپتالوں اور ایمبولینسز پر بمباری کی مذمت کی اور کہا یہ ناقابل قبول ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں