فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ پر حملے نہ رکے تو جنگ پورے مشرق وسطیٰ میں پھیلے گی: حزب اللہ

امریکہ فلسطیینیوں کے قتل عام میں اسرائیل کا مددگار ہے تو ہم فلسطینوں کے حامی ہیں نائب سربراہ حزب اللہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حزب اللہ کے رہنما نے غزہ کی پٹی میں اسرائیلی حملوں کے جاری رہنے سے جنگ پورے مشرق وسطیٰ میں پھیل سکتی ہے ۔ قاسم نعیم حزب اللہ کے نائب سیکرٹری جنرل ہیں ۔

انہوں نے اس امر کا اظہار ایک انٹرویو کے دوران کیا ہے۔ انہوں نے غزہ میں حملے جاری رہے تو مشرق وسطیٰ میں مکمل تصادم شروع جائے گا اور خطے میں امریکی فوجی اڈوں کو بھی نشانہ بنیں گے۔

ان کا کہنا تھا حزب اللہ کا اس تصادم میں حصہ لینے کا مقصد غزہ اسرائیلی دباو کو کم کرنے میں کردار ادا کرنا ہے۔

تاہم قاسم نعیم نے دھمکی دی اگر اسرائیل نے غزہ پر اپنی جارحیت جاری رکھی تو اسرائیل کے خلاف سرحد پارسے حملوں میں اضافہ ہو گا۔ ان کے مطابق اسرائیل اور امریکہ دونوں جارحیت کے مرتکب ہیں، کہ امریکہ اسرائیل کا پورا ساتھ دے رہا ہے۔

دوسری جانب حزب اللہ ایک طویل عرصے سے فلسطینی عسکریت پسندوں کا اتحادی ہے۔ اب سات اکتوبر سے بھی وہ حماس کے حق میں اور اسرائیل کے خلاف اپنے بیانیے پر قائم ہے۔

ایک سوال کے جواب میں قاسم نعیم نے کہا غزہ پر حملوں میں شدت کا مطلب یہ ہے کہ اس کے مضمرات اسرائیل کو بھی بھگتنا ہوں گے۔
ایک اور سوال کے جواب میں حزب اللہ کے رہنما نے کہا ' اگر امریکہ اور دوسرے بہت سے ملکوں کو غزہ شہریوں کے قتل عام میں بھی اسرائیل کا ساتھ دینے کا حق ہے تو ہمیں فلسطین میں اپنے پیارے فلسطینی بھائیوں کی حمایت کا حق کیوں نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں