غرب اردن میں اسرائیلی فوج کی کارروائی ،نو فلسطینی شہید 15 سے زائد زخمی

ایک ماہ کے دورا ن 170 سے زائد کو شہید اور 2000 فلسطینیوں کو گرفتار کر لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی فوج نے غزہ کے ساتھ ساتھ مغربی کنارے میں بھی فلسطینیوں کے کشت و خون کو تیز کرنے کی کوشش شروع کر دی ہیں، جمعرات کے روز جنین میں قائم پناہ گزین کیمپ پر فوجی حملے کے دوران کم از کم 9 فلسطینیوں کو شہید اور 15 سے زائد کو زخمی کر دیا ہے۔

اسرائیلی فوج نے اس واقعے کی تصدیق کی ہے مگر صرف اتنا کہا ہے کہ اس نے دہشت گردوں کے خلاف ایک کارورائی کی ہے۔ اس کے علاوہ کوئی تفصیل نہیں بتائی ہے۔

حالیہ مہینوں کے دوران جنین کیمپ میں اسرائیلی فوج کی کارروائیوں کے نتیجے میں اب تک درجنوں فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔

واضح رہے اسرائیل نے مغربی کنارے کو 1967 میں عرب اسرائیل جنگ میں قبضے میں لیا تھا۔ اس کے بعد سے اسرائیلی فوج باقاعدگی سے اس مقبوضہ علاقے میں اسطرح کی کارروائیاں کرتی رہتی ہے۔

سات اکتوبر کے بعد سے اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے میں کارروائیوں کے دوران 2000 سے زائد فلسطینیوں کو گرفتار کر لیا ہے۔ جبکہ پونے دو سو کے قریب شہید کر دیے ہیں۔ اس میں فلسطینیوں کی ہلاکت کے واقعات میں یہودی آباد کار بھی ملوث ہیں۔

اسرائیل کو خدشہ ہے کہ مغربی کنارے میں فوجی کارروائیوں کے ذریعے دھاک نہ بٹھائی گئی تو غزہ کی حمایت میں لوگ نکل سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں