حزب اللہ کا اسرائیل کے خلاف نئی قسم کے ہتھیار استعمال کرنے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنان کی مزاحمتی تنظیم حزب اللہ کے رہنما حسن نصر اللہ نے ہفتے کو اپنے خطاب میں کہا ہے کہ حالیہ دنوں میں ان کے مسلح گروپ نے نئی اقسام کے ہتھیار کا استعمال کرتے ہوئے اسرائیلی اہداف کو نشانہ بنایا ہے۔

یہ حسن نصر اللہ کا غزہ پر اسرائیلی جارحیت کے آغاز کے بعد دوسرا خطاب ہے۔

ٹیلی وژن پر نشر ہونے والے خطاب میں حسن نصر اللہ نے عہد کا اظہار کیا کہ جنوب میں اپنے ’دشمن‘ کے خلاف ان کا محاذ فعال رہے گا۔

حسن نصر اللہ نے کہا کہ اسرائیل کے خلاف محاذ میں ان کے آپریشن میں ’بہتری‘ آئی ہے۔ ’آپریشنز کی تعداد، حجم، اہداف کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، اور اس کے ساتھ ساتھ ہتھیاروں کی اقسام میں بھی اضافہ ہوا ہے۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’حزب اللہ نے برکان نامی میزائل کا استعمال کیا ہے، جس کا پےلوڈ 300 سے 500 کلوگرام کے درمیان ہے اور حزب اللہ نے پہلی بار ہتھیاروں سے لیس ڈرونز کا استعمال بھی کیا ہے۔‘

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں