ہزاروں فوجی غزہ کی پٹی کی گہرائی میں داخل ہوچکے: اسرائیل کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اگرچہ غزہ کی پٹی پر پرتشدد اسرائیلی گولہ باری اور بمباری آج ہفتے کے روز بھی جاری رہی۔

شمالی غزہ میں گھمسان کی لڑائی جاری ہے جہاں فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان خون ریز جھڑپیں ہو رہی ہیں۔

ہزاروں فوجی غزہ کی پٹی کی گہرائی میں موجود ہیں

اسرائیل براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے رپورٹ میں بتایا ہے کہ ہزاروں فوجی غزہ کی پٹی میں گہرائی میں موجود ہیں۔

انہوں نے ہفتے کے روز ایک بیان کہا کہ اسرائیلی افواج الشفاء ہسپتال سے 3 کلو میٹر کے فاصلے پر ہیں۔

اسرائیلی فوج نے اپنے ترجمان کے ذریعہ اعلان کیا ہے کہ اسرائیلی افواج غزہ کی پٹی کی سرزمین میں اپنی کاروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں جہاں وہ عسکریت پسندوں کو ختم کررہے ہیں اور طیاروں اور توپ خانے کو انفراسٹرکچر پر بمباری کے لئے ہدایت دے رہے ہیں۔

ڈینیئل ہاگری نے مزید کہا کہ زمینی کارروائیوں کے آغاز کے بعد سے اسرائیلی فوج نے حماس کے 11 فوجی ٹھکانوں پر قبضہ کیا ہے۔

قابض فورسز نے زیر زمین سرنگ کی نگرانی کے دوران بڑی تعداد میں سرنگوں کو تباہ کیا ہے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ بحری افواج نے شمالی غزہ کی پٹی میں کام کرنے والی اسرائیلی فوج کے خلاف حماس کے ذریعہ استعمال ہونے والی عمارتوں پر حملہ کیا جہاں حماس کے ہتھیاروں اور گولہ بارود کی بڑی مقدار ذخیرہ کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بحریہ اس شعبے کی سرزمین کے اندر کام کرنے والی پیادہ فوج کی ہدایت پرجنگ کے دائرے کو بند کرنے اور عمارتوں پر حملہ کرنے میں کامیاب رہی۔

براہ راست تصادم

یہ پیش رفت اس وقت سامنے آئی ہے جب فلسطینی دھڑوں اور اسرائیلی افواج کے مابین الناصر محلے کے محور میں براہ راست تصادم کی اطلاعات ہیں۔

العربیہ/ الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی کہ اسرائیلی ٹینک الناصر محلے کے پڑوس میں تعینات ہیں اور رات سے ہی جھڑپیں جاری ہیں۔

غزہ شہر کے الشفا ہسپتال پر کل بار بار اسرائیلی افواج پر بمباری کی ۔بجلی کی مکمل بندش سے ہسپتال اندھیرے میں ڈوب گیا۔

انہوں نے کہا کہ غزہ کے سب سے بڑے میڈیکل کمپلیکس کے آس پاس میں صحافیوں کے ساتھ رابطے منقطع ہوگئے ہیں۔

اسرائیل کی جانب سے وسطی غزہ کی پٹی میں نصیرات کیمپ میں مکان کو نشانہ بنانے سے متعدد اموات اور زخمی ہوئے۔

یہ قابل ذکر ہے کہ غزہ کی پٹی میں جنگ دوسرے مہینے میں جاری ہے جس میں اب تک 11078 سے زیادہ افراد شہید ہوئے ہیں۔ شہداء میں 4،506 سے زیادہ بچے بھی شامل ہیں۔

جبکہ عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل نے متنبہ کیا ہے کہ غزہ میں صحت کا نظام "مکمل طور پر مفلوج گیا ہے۔ ہر دس منٹ کے بعد غزہ میں ایک بچے کی موت ہو رہی ہے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں