غزہ میں گھمسان کی جنگ، القسام کا اسرائیلی فوجی گاڑیاں اور ٹینک تباہ کرنے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈز نے آج اتوار کو غزہ کے جنوب مغرب میں اسرائیلی فوج کے دو ٹینکوں اور ایک فوجی کیریئر کو "الیاسین 105" گولوں سے تباہ کرنے کا اعلان کیا۔

دریں اثناء اسرائیلی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ غزہ کے اطراف کے قصبوں میں آج تیسری بار سائرن کی آوازیں سنائی دی گئیں۔

کل ہفتے کو القسام نے اعلان کیا کہ اس نے غزہ شہر کے جنوب مغرب میں محور میں "ال یاسین 105" گولوں سے اسرائیلی فوج کی 3 فوجی گاڑیوں کو نشانہ بنایا۔ اس نے کہا کہ "مجاہدین نے مارٹر گولوں سے مارس فوجی کیمپ کو تباہ کر دیا"۔

غزہ میں اسرائیل اور مسلح فلسطینی دھڑوں کے درمیان جنگ 37ویں روز میں جاری ہے ، جب کہ غزہ کی پٹی کے مکینوں کی تکالیف کو کم کرنے کے لیے کسی فوری جنگ بندی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دے رہا ہے۔

زمینی سطح پر ہونے والی تازہ ترین پیش رفت میں غزہ شہر پر اسرائیلی حملوں کا نیا سلسلہ دیکھا گیا۔ جب کہ غزہ کی پٹی کے متعدد مقامات پر پرتشدد جھڑپیں اور اسرائیلی توپ خانے سے گولہ باری کی گئی۔ اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ وہ شمالی غزہ کے الشاطی کیمپ میں پرتشدد جھڑپوں میں پیش قدمی کررہی ہے۔ اسرائیلی فضائیہ نے غزہ میں اسلحہ کے ایک مبینہ گودام کو نشانہ بنایا ہے۔

فلسطینی میڈیا نے بتایا ہے کہ غزہ کے جنوب میں خان یونس میں ایک گھر پر اسرائیلی بمباری میں کم از کم 13 افراد شہید ہو گئے۔

العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار نے اندر سے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج نے الشفاء ہسپتال کا زمینی اور ہوائی راستے سے محاصرہ کر رکھا ہے۔

ہسپتال کے ارد گرد جھڑپوں کے علاوہ ہسپتال پر اسرائیلی فوجی ڈرونز کو بھی پرواز کرتے دیکھا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں