شام میں کونوکو امریکی اڈے پر 15 راکٹ فائر،4 امریکی فوجی ہلاک

حزب اللہ حمایت یافتہ ٹی وی کا دعویٰ۔امریکہ نے ابھی اس حملے کی تصدیق یا تردید ہونا باقی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنانی عسکری ملیشیا کے حامی ٹی وی چینل نے رپورٹ کیا ہے کہ پیر کے روز راکٹ حملے سے شام میں کونوکو کے گیس فیلڈ کے قریب امریکی فوجی اڈے کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

یہ حملہ دیر الزور کے شمال مشرق میں کیا گیا ہے۔ کہا گیا ہے کہ امریکہ کی طرف سے المیادین شہر پر کیے گئے حملوں کا جواب اس راکٹ حملہ سے دیا گیا ہے۔ امریکہ کی طرف سے ابوکامل کے علاقے میں بھی حملہ کیا گیا تھا۔

ٹی وی چینل کا اپنے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ ہے کہ کونوکو فوجی اڈے پر 15 راکٹ فائر کیے گئے اور اڈے پر امریکی کمانڈ کے ہیڈ کوارٹرز کو نشانہ ٹارگٹ کیا گیا۔

چینل کی رپورٹ کے مطابق اس راکٹ حملے میں کئی امریکی فوجی ہلاک ہو گئے۔ بتایا گیا ہے اس حملے میں گراڈ میزائل استعمال کیے گئے۔ جن کی زد میں آنے والے چار امریکی فوجی ہلاک ہوئے۔

علاوہ ازیں ٹی وی کے مطابق 'مزاحمتی گروپ نے الحسکہ کے علاقے الشادادی میں امریکی فوجی اڈے کو نشانہ بنایا ۔ یہ حملہ شام کے شمال مشرق میں کیا گیا۔'

تاہم اس حملے کی امریکی ذرائع سے تصدیق نہیں ہوئی ہے۔ اس بارے میں امریکہ کی جانب سے ابھی کوئی تبصرہ بھی نہیں کیا گیا۔ اس سے قبل امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے اتوار کے روز تصدیق کیا تھی کہ شام میں امریکی حملوں کی تصدیق کی تھی۔ ۔

امریکی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے بڑے نپے تلے انداز میں ایرانی پاسدران اور ایران سے جڑے گروپوں کے استعمال میں موجود سہولتوں پر حملے کیے ہیں۔

امریکی فوج کے مطابق یہ امریکی حملے شام اور عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر مسلسل کیے جانے والے حالیہ حملوں کے جواب میں کیے گئے ہیں۔ امریکی حملے المیادین اور ابو کامل کے علاقوں میں کیے گئے تھے۔

بیان میں کہا گیا ہے' امریکی صدر جوبائیڈن کے لیے امریکی مفادات اور فوجیوں سے بڑھ کر کوئی چیز نہیں ہے۔ اس لیے جہاں بھی ضروری ہوا امریکہ اپنا دفاعی حق استعمال کرے گا۔'

تاہم امریکہ یا پینٹاگون نے حزب اللہ کے گروپوں کی طرف سے المیادین کے فوجی اڈے پر کیے گئے حملوں کے بارے میں فی الحال کوئی تبصرہ یا تصدیق سامنے نہیں آئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں