فلسطین اسرائیل تنازع

شمالی غزہ کے ایک لاکھ بے گھر افراد کو پناہ، خوراک اور پانی میسر نہیں: ریڈ کراس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی نے اتوار کو غزہ کی پٹی میں لڑائی کے دوران پھنسے شہریوں کی حفاظت کے لیے فوری مداخلت کا مطالبہ کیا ہے۔ ریڈ کراس نے کہا کہ چاہے وہ انخلاء کی کوشش کر رہے ہوں یا اپنی جگہوں پر موجود رہیں انہیں تحفظ فراہم کیا جانا چاہیے۔"

غزہ میں ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی کے ڈائریکٹر ولیم شومبرگ نے کہا کہ پٹی میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ "ایک ناقابل برداشت انسانی المیہ ہے"۔ کمیٹی کی ٹیموں کے پاس شمالی علاقوں میں نقل مکانی کرنےوالوں کی حفاظت کی تیاریوں اور انتظامات کا فقدان ہے‘‘۔

انہوں نے مزید کہا، "آئی سی آر سی کو ان خطرناک اور غیر محفوظ حالات پر گہری تشویش ہے جن کے تحت شہریوں کو نکالا جا رہا ہے"۔ شومبرگ نے مزید کہا کہ ایک لاکھ بے گھر افراد میں پناہ گاہ، خوراک، پانی اور حفظان صحت کی فراہمی جیسی ضروریات کا فقدان ہے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ صورتحال تیزی سے "انسانی تباہی کے دہانے" کے قریب پہنچ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ غزہ کے جنوبی علاقے میں وہاں پہنچنے والے لوگوں کی بڑی تعداد کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے ضروری وسائل کی کمی ہے اور ملنے والی انسانی امداد کی رقم "بالکل ناکافی" ہے۔

غزہ میں ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی کے ڈائریکٹر نے اس بات پر زور دیا کہ کمیٹی ایک غیر جانبدار ثالث کے طور پر اپنا کردار ادا کرنے اور غزہ میں طبی سہولیات کے انخلاء کی حمایت کرنے کے لیے تیار ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں