غزہ میں 37 دن کی اسرائیلی جارحیت میں جاں بحق فلسطینیوں کی تعداد 11180 ہو گئی

قاہرہ نے اسرائیل کو آنے والے دنوں میں متعدد قیدیوں کی رہائی سے آگاہ کیا ہے: العربیہ ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی وزارت صحت نے اتوار کو بتایا کہ غزہ میں جنگ کے آغاز سے لے کر اب تک اسرائیلی حملوں میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 11,180 ہو گئی ہے۔ ایک باخبر فلسطینی عہدیدار نے کہا کہ حماس نے قیدیوں کی رہائی کے حوالے سے مذاکرات معطل کر دیے ہیں۔ اس کی وجہ اسرائیلی فورسز کی بمباری ہے۔ حماس نے کہا کہ اسرائیلی فورسز الشفا ہسپتال کے اطراف جارحیت جاری رکھے ہوئے ہے۔

’’العربیہ‘‘ اور ’’الحدث‘‘ ٹی وی کے ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ مصر نے آنے والے دنوں میں متعدد قیدیوں کی رہائی کے بارے میں اسرائیل کو آگاہ کیا ہے۔ ذرائع نے مزید کہا کہ اسرائیل قیدیوں کی پہلی کھیپ کو رہا کرنے سے پہلے کسی بھی جنگ بندی یا ایندھن کے داخلے کو مسترد کر رہا ہے۔

عرب عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اتوار سے قبل حماس کے ایک سرکردہ ذریعے نے کہا تھا کہ تحریک قیدیوں کے معاہدے کے حوالے سے اسرائیلی ردعمل کا انتظار کر رہی ہے۔ اس معاہدے کے تناظر میں تمام عام شہری اور دوہری شہریت والے افراد کی رہائی پر بات چیت کی جارہی ہے۔

ذریعہ نے بتایا کہ توسیع شدہ معاہدے میں 7 اکتوبر سے پہلے اور بعد میں اسرائیلی جیلوں میں قید ہماری خواتین قیدیوں اور بچوں کی رہائی اور غزہ میں ایندھن کا داخلہ بھی شامل ہے۔

یاد رہے حماس نے اس سے قبل انسانی وجوہات کی بنا پر خواتین قیدیوں کو رہا کیا تھا جن میں دو امریکی اور دو اسرائیلی شامل تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں