اسرائیل نےغزہ میں اسٹار لنک اسٹیشن بند کردیے، رہائشیوں کو پیغامات!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل نے حال ہی میں غزہ کے آس پاس کے علاقوں سے تمام سٹار لنک اسٹیشنوں کو بند کردیا ہے جن میں سے کچھ اسپیس ایکس کے مالک ایلون مسک سے منسلک ہیں۔ گذشتہ اکتوبر میں ان اسٹیشنوں سے غزہ کی پٹی کو انرنیٹ سروس فراہم کی جا رہی تھی۔

ایلون مسک کی طرف سے غزہ میں انٹرنیٹ کی فراہمی کے اعلان کے چند دن بعد کمپنی نے غزہ کی سرحد کے قریب اسرائیلی قصبوں میں "اسٹار لنک" سروس بند کر دی اور صارفین کو پیغام بھیجا کہ اسرائیلی وزارت مواصلات فی الحال اس سروس کو چلانے کی اجازت نہیں دیتی۔

یہ کہانی حماس کے حملے کے ایک دن بعد شروع ہوئی جب اسرائیل اور امریکا میں سرگرم کارکنوں نے اس سروس کو چلانے والی کمپنی SpaceX، اسرائیلی وزارت مواصلات، اور وزارت دفاع سے رابطہ کرنے کی کوشش کی تاکہ انہیں انٹرنیٹ منصوبے کی منظوری دینے پر قائل کیا جا سکے۔

اسٹار لنک (شٹر اسٹاک)
اسٹار لنک (شٹر اسٹاک)

درحقیقت درخواست کو وزارت مواصلات سے ابتدائی منظوری ملی اور پہلا اسٹیشن عین حبسور کے علاقے میں نصب کیا گیا۔

غزہ کی پٹی کے علاقے کے ایک رہائشی نے بتایا کہ وزارت مواصلات نے "اس خصوصی اقدام کے لیے اپنی حمایت واپس لے لی ہے جو بحیثیت قوم اور بحران کے وقت ایک ریاست کے طور پر ہماری طاقت کی نمائندگی کرتا ہے"۔

غزہ کی باڑ کے قریب اسرائیلی فوج(اے ایف پی)
غزہ کی باڑ کے قریب اسرائیلی فوج(اے ایف پی)

انہوں نے مزید کہا کہ "ایسا معلوم ہوتا ہے کہ SpaceX کو غزہ کے حوالے سے اسرائیل کی پالیسی سے اتفاق کرنے پر مجبور کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ اس وقت تک ملک میں Starlink کی سرگرمی کی اجازت نہیں دی جائے گی"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں