کنگ عبدالعزیز یونیورسٹی کی طرف سے فوت شدہ طالبہ کو ماسٹر ڈگری جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی جدہ میں قائم کنگ عبدالعزیز یونیورسٹی نے ایک فوت شدہ طالبہ کو اس کے مقالے کا دفاع کرنے کے بعد ماسٹر ڈگری سے نوازا۔ طالبہ دو سال قبل اپنے مقالے کا دفاع کرنے کے بعد انتقال کرگئی تھیں۔

طالبہ خلود بتوا کےتھیسز کی نگران ڈاكٹر فاطمہ يوسف نے وضاحت کی کہ "ماسٹر کے مقالے پر طالبہ کے لیے بحث کی گئی جو تھیسس کی تیاری اور اس پر کام کرتے ہوئے فوت ہو گئی تھی۔

طالبہ بہت محنتی اور ذہین تھی۔ وہ اکثر کہتی رہتی تھی 'مجھے امید ہے کہ میرا خاندان میری کامیابی سے خوش ہوگا اور میں اپنی زندگی کا خواب پورا کروں گی۔ رمضان کے مہینے میں کرونا وبائی بحران کے دوران بعد میں روزانہ تراویح کی نماز ادا کرتے ہوئے جلد اپنی سپروائزر سے ملاقات کی کوشش کرتی۔

ڈاکٹر فاطمہ نے زور دے کر کہا کہ طالبہ خلود سعودی عرب میں بالغوں میں جسمانی وزن میں اضافے اور چربی کی سطح کی پیمائش پر گرین کافی کے ایکسٹریکٹ سپلیمنٹ کے اثر پر مطالعہ کے ایک اعلی درجے کے مرحلے تک پہنچ گئی تھی۔

ڈاکٹر فاطمہ نے نشاندہی کی کہ طالبہ پر تھکاوٹ ظاہر ہونے لگی اور طبی معائنے کرنے کے بعد یہ واضح ہوا کہ اسے خوراک کی نالی کا کینسر ہے۔ بیماری کی تشخیص کے دو ہفتے بعد وہ انتقال کر گئی تھی‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں