اسرائیل کا دمشق میں حزب اللہ کے قریبی عناصر پر میزائل حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شامی فوج نے کہا ہے کہ فضائی دفاع نے جمعے کی صبح دمشق کے آس پاس کے متعدد مقامات کو نشانہ بناتے ہوئے گولان کی پہاڑیوں کی سمت سے اسرائیلی جارحیت کی تصدیق کی ہے۔

شامی فوج کے بیان میں اشارہ دیا گیا ہے کہ فضائی دفاع نے زیادہ تر میزائلوں کو مار گرایا اس نے مزید کہا کہ اس حملے کے نتیجے میں املاک کو نقصان پہنچا ہے۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی حملوں میں دمشق کے قریب لبنانی حزب اللہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

آبزرویٹری کے مطابق سیدہ زینب کے قرب و جوار میں پرتشدد دھماکوں کی آوازیں سنائی دیں ۔ آوازیں اتنی شدید تھیں کہ انہیں دور دور تک سنا گیا۔

اسرائیلی طیاروں کے نئے حملے کے نتیجے میں ان علاقوں کو نشانہ بنایا گیا جہاں حزب اللہ کے ہیڈ کوارٹر اور فوجی تنصیبات ہیں۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے 2023 کے آغاز سے اب تک 52 مرتبہ شام میں اسرائیلی حملوں کی نشاندہی کی ہے۔ ان میں سے 37 فضائی حملے، 15 زمینی شامل ہیں جن میں تقریباً 106 اہداف کو نقصان پہنچا۔ ان میں گولہ بارود کے ڈپو، فوجی ہیڈ کوارٹراور گاڑیاں شامل ہیں۔

ان حملوں کے نتیجے میں 96 شامی فوجی ہلاک اور112 زخمی ہوئے۔

اسرائیلی فوج نے گذشتہ ہفتے اعلان کیا تھا کہ شام میں ایک تنظیم نے ایک ڈرون لانچ کیا تھا جس نے جنوبی اسرائیل کے علاقے ایلات میں ایک اسکول کو نشانہ بنایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں