حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان گولہ باری کا سلسلہ جاری

سات اکتوبر سے اب تک حزب اللہ کے 70 اور 10 اسرائیلی ہلاک ہو چکے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنانی ملیشیا حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان ہفتے کے روز راکٹوں اور گولہ باری کا تبادلہ جاری رہا ہے۔ یہ میزائل داغے جانےاور راکٹ حملوں کی یہ کارروائیاں لبنانی سرحدی علاقوں میں ہوئیں ۔

دونوں طرف کے سرکاری حکام نے ان دو طرفہ حملوں کی تصدیق کی ہے۔ امریکہ ان جھڑپوں کو پورے مشرق وسطیٰ کے خلاف خطرناک قرار دیتا ہے کہ اس سے جنگ پورے علاقے میں پھیل جانے کا خدشہ ہے۔

ہفتے کے روز صبح سویرے ایرانی حمایت یافتہ حزب اللہ کے مطابق اس نے اسرائیل کا ایک ڈرون مار گرایا۔ جبکہ اسرائیلی فوج کا دعویٰ ہے کہ اس نے حزب اللہ کی طرف سے داغا گیا میزائل راستے میں روک دیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے مطابق کے میزائل حملے ذریعے اسرائیلی ڈرون کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔ تاہم دونوں طرف کے دعووں کی تصیق ہونا ابھی باقی ہے۔

لبنانی حکام کا کہنا ہے کہ اسرائیلی ہوائی حملے میں نبطیہ ٹاؤن کے نزدیک لبنانی صنعتی علاقے کو نشانہ بنایا گیا تھا۔ یہ علاقہ لبنان کے اندر واقع ہے۔ تاہم اسرائیل نے اس بارے میں ابھی کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ اس علاقے میں ایک ماہ سے اس طرح کے واقعات ہو رہے ہیں۔

لبنانی قانون ساز ہانی کو بیسے نے اس واقعے سے متعلق ایک ویڈیو تقسیم کی ہے۔ جسمیں دکھایا گیا ہے کہ ایک ایلومینیم کی دکان کو اسرائیل نے بمباری کا نشانہ بنایا ہے۔ دوسری جانب حزب اللہ نے ہفتے کے روز کئی بیانات جاری کیے ہیں۔

حزب اللہ کے مطابق اس نے اسرائیلی فوجیوں کو اسی علاقے میں جواب دیا ہے جہاں سے اسرائیل حملہ کر رہا تھا۔ حزب اللہ کے مطابق کئی اسرائیلی فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں۔

واضح رہے جب سے اسرائیل کے فوجیوں کو نشانہ بنانا شروع کر رکھا ہے جب سے اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ جاری ہے۔ اس دوران 70 حزب اللہ کے وابستگان ہلاک ہوئے۔ ہیں جبکہ 10 اسرائیلی فوجی مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں