حماس کے زیر حراست یرغمالیوں کی رہائی لڑائی روکنے کا ذریعہ بنے گی: امریکی عہدیدار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن کے مشرق وسطیٰ کے امور کے سینیر مشیر بریٹ میک گرک نے ہفتے کے روز کہا ہے کہ حماس کے زیر حراست قیدیوں کی رہائی سے انسانی امداد کی ترسیل میں اضافہ اور غزہ میں لڑائی کے موثر خاتمے کا باعث بنے گا۔

انہوں نے بحرین میں منامہ سکیورٹی ڈائیلاگ اجلاس میں شرکت کے دوران مزید کہا کہ "جب زیر حراست افراد کو رہا کیا جائے گا تو آپ واضح تبدیلی دیکھیں گے"۔

جمعہ کے روز سمٹ میں اپنی تقریر کے دوران بحرین کے ولی عہد نے حماس سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیلی خواتین اور بچوں کو رہا کرے جس کے بدلے میں اسرائیل فلسطینی خواتین اور بچوں کو رہا کرے۔ ان کا کہنا تھا کہ حماس اور اسرائیل دونوں کو عام شہریوں کو رہا کردینا چاہیے۔

آج ہفتے کے روز اسرائیلی فورسز نے غزہ میں الشفا میڈیکل کمپلیکس کو ایک گھنٹے کے اندر خالی کرنے کی وارننگ دی تھی۔ جس کے بعد ہسپتال سے طبی عملہ اور زیادہ تر مریض وہاں سے چلے گئے۔

اسرائیل نے خان یونس شہر میں فلسطینیوں کو ایک نیا انتباہ بھی جاری کیا، جس میں ان سے کہا گیا کہ وہ مغرب کی طرف نکل جائیں اور اپنے گھر چھوڑ دیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں