غزہ: اب تک 5000 بچوں سمیت 12000 سے زائد لوگ شہید، شہدا میں 3300 خواتین شامل

غزہ حکومت نے فلسطینی شہدا کے اعداد و شمار باضابطہ جاری کر دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

غزہ کے اطلاعات سے متعلق دفتر نے جمعہ کے روز اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں اب تک غزہ میں 12 ہزار سے زائد فلسطینی شہہید ہو چکے ہیں جن میں پانچ ہزار بچے بھی شامل ہیں۔

حماس کی حکومت کی طرف سے جمعہ کے روز فلسطینی شہریوں کی ہلاکت سے متعلق سامنے لائے گئے تازہ اعداد و شمار میں خواتین کی ہلاکتوں کا بھی بطور خاص ذکر ہے جو اپنے گھروں پر اسرائیلی بمباری کے دوران شہید ہوگئیں۔ ان خواتین کی تعداد 3300 بتائی گئی ہے۔

مسلسل جاری رہنے والی اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں بتایا گیا ہے کہ اب تک 30 ہزار سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں۔ جن کے لیے علاج معالجے کی کوئی سہولت غزہ میں باقی نہیں رہنی دی گئی کہ اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں ہسپتال مسمار کیے جا چکے ہیں۔

واضح رہے غزہ حکومت نے اس سے پہلے جنگی شدت کے دوران یہ اعداد و شمار باضابطہ جاری نہیں کیے تھے۔ جنگی شدت کے دنوں میں مسلسل بمباری کے نتیجے میں لاشوں اور زخمیوں کو نکالنا بھی بہت مشکل رہا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں