کئی روز محاصرہ کے بعد 41 نومولودوں کو شفا ہسپتال سے نکال لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کے ہسپتالوں کے ڈائریکٹر محمد زقوت نے اعلان کیا ہے کہ کئی روز کے محاصرہ کے بعد بالآخر غزہ کے شفا میڈیکل کمپلیکس سے تمام 41 قبل از وقت پیدا ہونے والے بچوں کو نکال لیا گیا ہے۔ العربیہ/الحدث کے نمائندے نے اتوار کو اطلاع دی کہ بچے رفح کے اماراتی ہسپتال پہنچے ہیں۔ تین بچے راستہ میں ہی دم توڑ گئے۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ بچوں کو کل مصری سرزمین پر منتقل کر دیا جائے گا۔

مقامی مصری میڈیا کے مطابق یہ سب اس وقت ہوا جب رفح کراسنگ سے ایمبولینسز غزہ میں داخل ہوئیں تاکہ بچوں کو صحت کی دیکھ بھال کے لیے مصر کی طرف لے جایا جا سکے۔

فلسطینی ہلال احمر نے وضاحت کی کہ اس کی ایمبولینس کے عملے نے اتوار کے روز عالمی ادارہ صحت اور اقوام متحدہ کے دفتر برائے انسانی ہمدردی کے رابطہ کے ساتھ مل کر غزہ کے شفا ہسپتال سے قبل از وقت پیدا ہونے والے درجنوں بچوں کو نکالنے میں کامیابی حاصل کی۔ .

انہوں نے اپنے فیس بک پیج پر ایک پوسٹ میں مزید کہا کہ قبل از وقت نومولود بچوں کو چند روز قبل محصور طبی مرکز سے ایمبولینسوں کے ذریعے جنوب میں منتقل کیا گیا تھا۔ ان بچوں کو مصر کے شہر رفح میں ایمریٹس ہسپتال منتقل کیا جارہا۔ فلسطینی وزارت صحت نے اعلان کیا تھا کہ بچوں کو نکالے جانے سے قبل 120 زخمی افراد شفا ہسپتال میں موجود تھے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کا اندازہ ہے کہ لگ بھگ 2,300 لوگ اب بھی میڈیکل کمپلیکس میں پھنسے ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں