فلسطین اسرائیل تنازع

عالمی ادارہ صحت کی کارکن چھ ماہ کے بچے اور شوہر سمیت اسرائیلی بمباری سے جاں بحق

بمباری سے دو بھائی بھی جاں بحق ہوئے ، غزہ میں ان کا رہائشی مکان بھی مکمل تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے اپنے ادارے کی ایک رکن کی اپنے بچے ، شوہر اور خاندان کے دیگر افراد سمیت اسرائیلی بمباری سے کی گئی ہلاکت پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے۔ہم نے آج اپنی ایک ساتھی کھو دی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے چیف نے اپنے ' ایکس ' کے ذریعے جاری کیے گئے بیان میں کہا ہے ' آج میں اور میرے رفقائے کار تباہی سے دوچار ہیں، ہم نے ایک اپنے کو کھو دیا ہے۔ ' ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم غبریئیسس نے اس بیان کے ساتھ اپنی ٹیم ممبر دیما الحاج کی تصویر بھی پوسٹ کی ہے۔

دیما الحاج منگل کے روز اسرائیلی بمباری کا نشانہ بنائی گئیں۔ ان کے ساتھ ان کا چھ ماہ کا بچہ ، شوہر اور دو بھائی بھی اس بمباری سے ہلاک ہو گئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ دیما الحاج اپنے خاندان کے دوسرے افراد کے ساتھ ایک ہی گھر میں رہتی تھیں ۔

بمباری سے اب مکان بھی مکمل تباہ ہو گیا ہے اور مکان کے مکین بھی ہلاک ہو گئے ہیں۔ تاہم عالمی ادارہ صحت کی طرف سے ابھی تک اس واقعے کی مزید کوئی تفصیلات سامنے نہں لائی گئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں