فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ کے 3 ہسپتالوں سے مریضوں کو نکالنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے: عالمی ادارہ صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عالمی ادارہ صحت کے ترجمان نے منگل کے روز بتایا ہے کہ اسرائیل کی طرف سے محصور غزہ کی پٹی کے تین ہسپتالوں نے مریضوں کو نکالنے میں مدد کی درخواست کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس درخواست کو پورا کرنے کے لیے منصوبہ بندی شروع کر دی گئی ہے۔

اسرائیل اور حماس کے درمیان لڑائی میں ہسپتالوں پر بمباری کی گئی اور پٹی کے شمالی حصے میں تمام ہسپتالوں نے معمول کے مطابق کام کرنا بند کر دیا، حالانکہ انہوں نے کچھ ایسے مریضوں کو پناہ دینے کا سلسلہ جاری رکھا بھاگ نہیں سکتے۔

ترجمان کرسچن لنڈمیئر نے کہا کہ انخلاء آخری حربہ ہے۔

انہوں نے جنیوا میں ایک پریس کانفرنس میں وضاحت کی کہ یہ اقدام شمالی غزہ کی پٹی کے تمام باشندوں کو صحت کی دیکھ بھال تک رسائی سے محروم کر دےگا۔ انہوں نے کہا کہ تین ہسپتالوں میں الشفاء میڈیکل کمپلیکس، انڈونیشین ہسپتال اور الاھلی ہسپتال شامل ہیں۔ معاملہ ابھی منصوبہ بندی کے مراحل میں ہے اور اس کی مزید تفصیلات نہیں دیں۔

اسی پریس کانفرنس میں اقوام متحدہ کے چلڈرن فنڈ (یونیسیف) نے "بڑے پیمانے پر بیماریاں پھیلنے" کے خطرے سے خبردار کیا جو گنجان آباد پٹی ر میں بچوں کی اموات میں اضافے کا باعث بن سکتا ہے، جہاں ہزاروں لوگ پناہ گاہوں میں ہجوم ہیں۔

ایندھن اور پانی کی کمی

اسرائیلی فوج اور فلسطینی دھڑوں کے درمیان جنگ کے 46 ویں دن میں داخل ہے۔ اقوام متحدہ کے بچوں کے فنڈ (یونیسیف) نے منگل کو خبردار کیا ہے کہ غزہ کی پٹی میں ایندھن اور پانی کی کمی کی وجہ سے صحت کا "سانحہ" رونما ہو رہا ہے۔

یونیسیف کے ترجمان جیمز ایلڈر نے جنیوا میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ اگر ایندھن مناسب مقدار میں دستیاب نہیں ہے توہسپتال میں صحت اور صفائی کا نظام تباہ ہوسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "پانی کی شدید قلت ہے۔ گنجان آباد علاقوں میں فضلہ پھیل رہا ہے۔ لیٹرین ناقابل استعمال ہیں‘‘۔

ترجمان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ غزہ کی پٹی میں ذاتی حفظان صحت کو برقرار رکھنا یا ہاتھ دھونا بھی بہت مشکل ہے۔

حماس کے اس بے مثال حملے کے نتیجے میں اسرائیل میں 1,200 افراد مارے گئے، جن میں اکثریت عام شہریوں کی تھی، جب کہ اسرائیلی حکام کے مطابق 240 افراد کو یرغمال بنا کر غزہ کی پٹی لے جایا گیا۔

حماس کی وزارت صحت کے مطابق غزہ کی پٹی میں اسرائیلی بمباری کی کارروائیوں میں 13,300 سے زائد افراد شہید ہوئے جن میں 5,600 سے زائد بچے بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں