فلسطین اسرائیل تنازع

سات اکتوبر کے بعد پہلی باراسرائیل لبنان سرحد پر بھی سکون لوٹ آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل اور حماس کے درمیان چار دن کے لیے جنگ بندی شروع ہوتے ہی لبنان کی جنوبی سرحد پر بھی سکون لوٹ آیا ہے۔ قطر، مصر اور امریکہ کی کوششوں سے غزہ کی جنگ میں مختصر وقفے کا فیصلہ بدھ کی رات ہوا تھا، جس پر جمعہ کی صبح سے عمل درآمد شروع کر دیا گیا ہے۔

اس سے قبل سات اکتوبر سے اسرائیل اور غزہ کی جنگ شروع ہوتے ہی لبنانی جنوبی سرحد پر بھی اسرائیل اور حزب اللہ کے درمیان مسلسل گولہ باری کے واقعات شروع ہو گئے تھے، جن میں جمعرات کے روز کافی تیزی آگئی تھی۔

تاہم ابھی تک حزب اللہ نے اس مختصر جنگی وقفے کے بارے میں کوئی ایسی بات نہیں کہی جس سے یہ اندازہ ہو کہ حزب اللہ اس معاہدے کی پابندی کرے گی یا نہیں، تاہم ایک غیر اعلانیہ انداز میں لبنانی سرحد کے آر پار خاموشی اور سکون دیکھا گیا ہے۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق لبنان کے مرجاؤن بارڈر کے نزدیک جنگ بندی شروع ہونے سے دس منٹ پہلے اسرائیل اور حزب اللہ کے درمیان فائرنگ کے تبادلے کی آوازیں سنی گئیں لیکن بعد ازاں دونوں طر ف کی بندوقیں خاموش ہو گئیں۔

لبنانی سرحد کے نزدیک الما الشعب کے قریب رہنے والے ایک مقامی شخص نے بتایا آج سکون کا احساس ہے اور اسرائیلی جنگی طیاروں اور ڈرون طیاروں کی آوزیں سننا نہیں پڑ رہی ہیں ، نہ ہی وہ ہمارے آس پاس اڑ رہے ہیں۔

واضح رہے جنگ بندی کے اعلان کے ساتھ ہی حزب اللہ نے اسرائیلی فوجی ٹھکانوں پر حملے تیز کر دیے تھے۔

اب تک اسرائیل اور حزب اللہ کے درمیان ہونے والی گولہ باری کے نتیجے میں مجموعی طور پر 109 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ ان میں سے چھ اسرائیل فوجی اور تین شہری ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں