شاہ سلمان سینٹر کے سربراہ کا مظلوم فلسطینی عوام کے نام نیک تمناؤں کا پیغام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شاہ سلمان ریلیف سینٹر کے جنرل سپروائزر ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ نے مظلوم فلسطینی عوام کے لیے بھیجے امدادی سامان کے ساتھ ایک تحریری پیغام بھی ارسال کیا ہے جس میں ان کے لیے سعودی عرب کی حکومت اور قوم کی طرف سے نیک تمناؤں کا اظہار کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ کا یہ پیغام سوشل میڈیا کی زینت بنتے ہوئے وائرل ہوگیا۔ انہوں نے ایک سفید کاغذ پر فلسطینی عوام کے نام ایک پیغام لکھا جسے امدادی سامان کی ایک کھیپ پر نصب کیا گیا۔

پیغام میں سعودی عرب کی طرف سے دھائیوں سے فلسطینی قوم کو مشکل وقت میں دی جانے والی امداد کی طرف توجہ دلائی گئی اور سعودی قوم کےمظلوم فلسطینی بھائیوں کے لیے ہمدردی اور بھائی چارے کے جذبات کو اجاگر کیا گیا۔

الربیعہ نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل پر رفح کراسنگ کو انسانی امداد کے لیے کھولنے کے لیے دباؤ ڈالے۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس اجتماع میں غزہ کے لوگوں کی تباہ کن مصائب کو کم کرنے کے لیے متعدد معاہدوں پر دستخط کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔ ان کاکہنا تھا کہ سعودی عرب سے مصر کے العریش شہر تک امدادی سامان کا فضائی پل قائم کیا جا رہا ہے۔ اب تک پندرہ مال بردار طیارے امدادی سامان لے کر العریش پہنچ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ سمندر کے راستے بھی امدادی سامان پہنچانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا: "العریش اور رفح میں 326 ٹرک امدادی سامان اور 20 ایمبولینسیں پہنچی ہیں اور فلسطینی عوام کے مصائب کو کم کرنے کے لیے یہ امداد اب بھی جاری ہے"۔

قابل ذکر ہے کہ سعودی وزارت خارجہ نے اس بات کی تصدیق کی کہ مملکت غزہ میں انسانی ہمدردی کی بنیاد پر جنگ بندی کے معاہدے کا خیرمقدم کرتی ہے۔ قطر، مصری اور امریکی کوششوں کو سراہتی ہے، جس میں فوجی کارروائیوں کے جامع خاتمے اور شہریوں کے تحفظ کے مطالبے کی تجدید کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں